Type to search

تلنگانہ

آندھرا پردیش میں جگن نے شراب بندی کو لیکر اٹھایا قدم، سبھی بار کے لائسنس کیے رد

امراوتی،24نومبر(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) آندھراپردیش کی جگن حکومت جمعہ کو ریاست میں چل رہے سبھی بار کے لائسنس منسوخ کردئیے ہیں۔ ریاست میں مرحلہ وار طریقے سے  شراب کو لیکر تین دن پہلے حکومت نے 40 فیصدی بار بند کرنے کا فیصلہ لیا تھا۔ ریاستی حکومت ریاست میں دو سالوں کے لیے نئی بار پالیسی بھی لیکر آئی ہے۔ جو یکم جنوری 2020 کے بعد سے نافذ ہوگی۔

اس پالیسی کے تحت حکومت نے بار کھولنے کے لیے 10 لاکھ روپے کی فیس طے کرتے ہوئے لاٹری سسٹم سے لائسنس دینا طے کیا ہے۔ وزیراعلی وائی ایس جگن موہن ریڈی نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ موجود 798 باروں میں سے 40 فیصد کو بند کردیا جائے۔ وائی ایس آر کانگریس پارٹی کی حکومت نے اسکے کھپت میں کمی لانے کے لیے شراب کی قیمت بڑھانے کی بھی تجویز پیش کی ہے۔

Tags:

You Might also Like