Type to search

اسپورٹس

معصوم اتھیلٹ کے پاس نہیں تھے جوتے تو ٹیپ لگا کر ہی دوڑی، 3 گولڈ جیت کر کیا سب کو حیران

اسپورٹس ڈسک،17ڈسمبر(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) 2019 خواتین اتھیلٹس کے لیے بے حد شاندار رہا، اس سال خواتین نے اسپورٹس کی دنیا میں اپنا دبدبہ بنائے رکھا، ہندوستانی خاتون کھلاڑیوں نے بھی قومی اور بین الاقوامی سطح تک پہچنے کے لیے جی جان سے محنت کی- اسی سال بیڈمنٹن اسٹار پی وی سندھو ورلڈ بیڈمینٹن چیمئین بننے والی پہلی ہندوستانی بنی، لیکن اتنی بڑی جیت حاصل کرنا کیا اتنا آسان ہوتا ہے، اس مقام تک پہچنے کے لیے سخت محنت کرنے کی ضرورت رہتی ہے، ایسی ہی کہانی فلپائن کی 11 سال کی اتھیلٹ کی ہے جو اپنی کامیابی سے ان دنوں بحث میں ہے-

حال ہی میں فلپائن کی ایک گیارہ سال کی اتھیلٹ کھیل کے لیے اپنی لگن کو دیکھتے ہوئے بغیر جوتے کے ریس میں دوڑی، انڈین ایکسپریس کی رپورٹ کے مطابق Rhea Bullos ریعہ بلوس نام کی ایک اتھیلٹ انٹر اسکول رننگ میٹ میں اپنے پاؤں میں خاص طرح کے جوتے پہن کر دوڑی، دراصل ننھی اتھیلٹ نے بینڈیج کی مدد سے یہ جوتے بنائے تھے، یہی نہیں بلوس نے اینکل اور سول کو ڈھکنے کے لیے بینڈیج کی سائیڈ میں اپنے طرح کے نائکی لوگوں بھی لگایا-

سی بی ایس رپورٹ کے مطابق اس ننھی اتھیلٹ نے اپنے حریف کو ہرایا اور تین گولڈ مڈل جیتے، بلوس نے 400 میٹر ، 800 میٹر اور 1500 میٹر دوڑ میںیہ تمغہ حاصل کیے، کوچ پریڈرک بی نے جب آن لائن اتھیلٹ کی فوٹو شیئر کی تو لوگوں نے نائکی سے درخواست کی کہ وہ بچی کی مدد کے لیے آگے آئے، اسکے بعد ایک باسکٹ بال اسٹر کے مالک جیف کیریسو نے ٹیوٹر یوزرس سے اتھلیٹ کا نمبر مانگا، جسکے بعد بلوس تک مدد پہنچا دی گئی-