Type to search

اسپورٹس

وائیکام۔18 بنا ساوتھ افریقہ کی ٹی20 لیگ کاآفیشیل انڈین براڈکاسٹر

وائیکام 18

 دس 10 سال کے لیے براڈ کاسٹنگ رائٹس خریدے


 نئی دہلی، 3 نومبر۔ 2022 (پریس نوٹ) ہندوستانی کرکٹ شائقین کے لیے اچھی خبر ہے۔ حال ہی میں جنوبی افریقہ لانچ کی گئی پریمیئر ٹی20 لیگ (SA20) سے اب ہندوستانی شائقین بھی لطف اندوز ہوسکیں گے۔ اس کے لیے وائیکام 18 سپورٹس نے جنوبی افریقی لیگ کے ساتھ اسٹریٹجک شراکت داری کی ہے۔ وائیکام۔18 اگلے 10 سالوں تک لیگ کا آفیشیل انڈین براڈ کاسٹر ہوگا۔ لیگ کے تمام میچ وائیکام۔ 18 سپورٹس چینل پر دکھائے جائیں گے۔

 

 ساوتھ افریقہ ٹی۔20 لیگ  میں کوئنٹن ڈی کاک، فاف ڈو پلیسس، کاگیسو ربادا، ڈیوڈ ملر، اینریک نورٹجے، راشد خان، جوس بٹلر، ایون مورگن، عادل راشد، جیسن رائے، لیام لیونگسٹون، جیسن ہولڈر جیسے بین الاقوامی کرکٹ سپر اسٹارز ایکشن میں نظر آئیں گے۔ لیگ کو کامیاب بنانے کے لیے کرکٹ جنوبی افریقہ (CSA) کے تقریباً تمام بہترین کھلاڑی ایس اے 20 ٹورنامنٹ میں حصہ لیں گے۔

 ساوتھ افریقہ 20 لیگ کا کرکٹنگ فارمیٹ بھی مختلف ہوگا۔ راؤنڈ رابن مرحلے میں کل 6 ٹیمیں ہوں گی۔ ہر ٹیم دوسری ٹیموں سے دو دو بار کھیلے گی۔ سیمی فائنل اور فائنل ٹیموں کے پوائنٹس کی بنیاد پر کھیلے جائیں گے۔ 10 جنوری 2023 سے شروع ہونے والے چار ہفتوں کے اس ٹورنامنٹ میں کل 33 میچ کھیلے جائیں گے۔ ٹورنامنٹ میں شرکت کرنے والی چھ ٹیمیں جوبرگ سپر کنگز، پریٹوریا کیپٹلز، ڈربن سپر جائنٹس، سن رائزرز ایسٹرن کیپ، پارل رائلز اور ایم آئی کیپ ٹاؤن ہیں۔

 

وائیکام ۔18 سپورٹس کے سی ای انل جئے راج نے کہا، “ہم SA20 کے شاندار کرکٹ ایکشن کے ساتھ اپنے کھیلوں کے پورٹ فولیو کو مزید مضبوط کر رہے ہیں۔   ٹی۔ 20 ہندوستانی شائقین میں کرکٹ کا سب سے مقبول فارمیٹ ہے۔ جنوبی افریقہ میں بہت ساری کرکٹ اور کھلاڑ یوں کو بھارت میں خوب پسند کیا جاتا ہے۔ ہم ناظرین اور مداحوں کی مصروفیت کے منتظر ہیں۔

 

 ایس اے 20 لیگ کے کمشنر اور جنوبی افریقہ کے سابق کپتان گریم اسمتھ نے کہا کہ “آج کا دن جنوبی افریقی کرکٹ کے لیے ایک اہم دن ہے۔ ہم اس لیگ کو دنیا کی دوسری سب سے بڑی لیگ بنانے کا خواب دیکھ رہے ہیں اور  ایس اے 20 اور وائیکام 18- سپورٹسکے درمیان شراکت داری اس خواب کو پورا کرنے اور ایک مضبوط کرکٹ ایکو سسٹم بنانے میں مدد دے گی۔

 

 ستمبر میں SA20 کی افتتاحی نیلامی میں چھ ٹیموں نے 100 سے زائد کھلاڑیوں کو سائن کیا تھا۔ ٹیمیں اپنے سکواڈ میں زیادہ سے زیادہ دس جنوبی افریقی اور سات غیر ملکی کرکٹرز کو شامل کر سکتی ہیں۔ ٹیموں کو پلیئنگ الیون میں زیادہ سے زیادہ چار غیر ملکی کھلاڑی رکھنے کی اجازت ہوگی۔