Type to search

بین الاقوامی

لداخ سرحد پر چینی سرگرمیوں پر امریکہ کا بیان، خطرہ بنتا جارہا ہے چین

دہلی،21مئی (ذرائع) امریکہ نے کہا کہ سرحد تنازعہ، پھر چاہے لداخ میں ہویا جنوبی چین ساگر میں، چین کی طرف سے پیدا ہورہے خطرے کی یاد دلاتا ہے۔ جنوبی اور وسطح ایشیا معاملوں میں سبکدوش نائب وزیر ایلس ویلز کا یہ بیان زمین اور ہوا کے ذریعہ چینی دراندازیوں کے بعد سامنے آیا ہے۔ اس میں لداخ کا معاملہ ہندوستانی اور چینی فوجیوں کے درمیان آمنے سامنے آنے کا ہے۔

امریکہ نے کہا، چین کی طرف سے اسکانے اور پریشان کرنے والا برتاؤ یہ سوال اٹھاتا ہے کہ بیجینگ اپنی بڑھتی طاقت کا استعمال کیسے کرنا چاہتا ہے ؟ اس لیے اپنے ہم خیال والے ملکوں کی یکجہتی دیکھی ہے، چاہے وہ آسیان میں ہویا دیگر سفارتی گروہ جیسے کہ امریکہ، جاپان اور ہندوستان کے سہ فریقی تعلقات کے ذریعہ، پچھلے کچھ ہفتوں میں یہ رپورٹ آنے کے بعد کہ چین گولان ندی کے پاس خیمے لگا رہا ہے، ہندوستان نے سرحد سے لگے علاقے میں فوجیوں کی نئے سرے سے تعیناتی کی۔ سال 1962 کے دوران تنازعہ کا مرکزی نقطہ رہا یہ مقام حال کے وقت میں پھر چین کے جارحانہ رویے کا گواہ بنا ہے۔ چین یہاں تعمیری سرگرمیاں بڑھا رہا ہے۔