Type to search

بین الاقوامی

جارج فلائیڈ کی موت پر مظاہرہ: وائٹ ہاؤس کے سامنے پرتشدد تصادم ، پولیس نے آنسو گیس کے گولے برسائے

واشنگٹن،1جون(اے ایف پی) امریکہ میں سیاہ فام شخص جارج فلائیڈ کی موت کے بعد پچھلے چھ دنوں سے مسلسل احتجاج جاری ہے۔ اتوار کو بڑی تعداد میں مظاہرین امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے رہائش گاہ وائٹ ہاؤس کے سامنے جمع ہوگئے۔ یہاں پولیس اور مظاہرین کے درمیان تب پرتشدد تصادم ہوگیا، جب پولیس نے ان پر آنس گیس کے گولے اور فلیش بینگ ڈیوائس جیسے استعمال کرنا شروع کردیا۔ اس سے وائٹ ہاؤس کے سامنے تشدد جیسے حالات پیدا ہوگئے۔ وائٹ ہاؤس کے سامنے جمع ہوکر یہ مظاہرین بینر اور پوسٹر لہرا کر نعرے لگا رہے تھے۔

امریکی پولیس کی بربریت کے خلاف اتوار کو جب پھر سے مظاہرین نے مظاہرین نے مظاہرہ کرنا شروع کیا تھا۔ تو دارالحکومت واشنگٹن میں کرفیو لگا دیا گیا۔ یہاں سیاہ فام شخص جارج فلائیڈ کی ایک پولیس افسر کے اس کے گلے پر گھٹنے ٹیکے رکھنے کے بعد دم گھٹنے سے موت ہونے پر لگاتار نسل پرستی اور سیاہ فاموں پر پولیس کی طرف سے کی جانے والی بربریت پر بڑے سطح پر مظاہرہ ہورہا ہے۔

بتادیں کہ لاس اینجلس ، ہیوسٹن اور منیپولس (جہاں یہ واقعہ پیش آیا ہے) میں نائٹ کرفیو نافذ کردیا گیا ہے۔ مینیپولس میں ہزاروں مظاہرین نے مظاہرہ کیا۔