Type to search

اسپورٹس

انگلینڈ ۔ جولائی 2020 سے شروع ہوگا 100 بال کا کرکٹ

اسپورٹس ڈسک،22اکتوبر(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ (ای سی بی) جولائی 2020 سے کرکٹ کے نئے فارمیٹ 100 بال، (دی ہندریڈ) کی شروعات کریں گا۔ گرمی کی تعطیلات کو مدنظر رکھ کر شروع کیے گئے اس ٹورنامنٹ میں 8 فرنچائز ہونگے۔ ہر فرنچائز کی ایک خاتون اور ایک مرد ٹیم ہوگی۔ 100 گیندوں کے میچ میں 10 گیند کا ایک اوور ہوگا۔ کپتان چاہے گا تو دو گیندباز اوور کی 5-5 اوور کرسکے گا۔ ٹورنامنٹ میں لندن کی دو ٹیمیں ہونگی۔ جبکہ چھ ٹیمیں الگ الگ شہروں سے رہے گی۔

سو 100 بال فارمیٹ کے قواعد
اس میں ٹی 20 فارمیٹ سے 20 گیند کم ہونگی۔ بلے باز 10 گیند کے بعد اپنا سرے بدل سکتا ہے۔ فی الحال ایسا 6 گیندوں کے بعد ہی ہوتا ہے۔
ایک گیندباز لگاتار 5 یا 10 گیند پھینک سکتا ہے۔ حالانکہ انگیز میں وہ 20 سے زیادہ گیند نہیں کرے گا۔
انگیز کی شروعات میں 25 گیندوں تک پاور پلے لاگو ہوگا۔ اس میں صرف دو فیلڈر 30 جگہ سے باہر رہے گا۔
ہر ٹیم کو 2.5 منٹ کا اسٹریٹجک ٹائم آوٹ ملے گا۔

 گیند25 کا پاور پلے ہوگا
ایک انگیز میں 25 گیند کا پاور پلے ہوگا۔ اس دوران 30 یارڈ کے دائرے کے باہر صرف دو کھلاڑی رہ سکیں گے۔ ونڈے اور ٹی 20 میں یہ دیکھا گیا ہے کہ بلے باز رن بنانے سے پہلے کچھ دیر کریز پر جمنے میں لگاتا ہے۔ ایسے میں 25 گیندوں کے پاور پلے میں اسے تیزی سے رن بنانے ہونگے۔ 2015 کے بعد سے ونڈے اور ٹی 20 میں تیسرے اوور کے بعد ہی تیزی سے رن بناتے ہیں۔ ٹی 10 میں دوسرے اوور کے بعد سے ہی بلے باز تیزی سے رن بنانے لگتے ہیں۔

وقت
ایک میچ قریب ڈھائی گھنٹے چلے گا۔
گیندبازی ٹیم کو ڈھائی منٹ کا اسٹریٹجک بریک ملے گا۔
اس دوران کوچ میدان پر آکر ٹیم کے ساتھ حکمت عملی پر تبادلہ خیال کرسکے گا۔

ٹیم کے لیے قواعد
ایک ٹیم میں زیادہ سے زیادہ 15 کھلاڑی ہوں گے۔
ٹیم کو زیادہ سے زیادہ 3 غیر ملکی کھلاڑی رکھنے کی اجازت۔
ہر ٹیم کے پاس کم سے کم ایک انگلش ٹیسٹ پلیئر ہونا ضروری۔

Tags:

You Might also Like