Type to search

وائرل

چائے بیچنے والے کی بیٹی آنچل گنگوال بنی فائٹر پائلٹ

Anchal Gangwal Indian Air Force Pilot

کہتے ہیں ہیں کہ ٹیلنٹ کبھی کسی ذریعہ کی محتاج نہیں ہوتی بلکہ جنہیں خود پر بھروسہ ہوتا ہے۔ وہ ایک نہ ایک دن اپنی منزل پار کر ہی لیتے ہیں۔


مدھیہ پردیش،24جون(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) مدھیہ پردیش کے نیمچ میں چائے بیچنے والے کی بیٹی آنچل گنگوال (24) ہندوستانی فضائیہ میں فلائنگ آفیسر بن گئیں۔ آنچل کے والد سریش گنگوال مدھیہ پردیش کے دارالحکومت بھوپال سے 400 کلومیٹر دور نمیچ میں بس اسٹینڈ پر چائے کی ایک چھوٹی دکان چلاتے ہیں۔

 

مدھیہ پردیش کے نمیچ میں چائے کی دوکان لگانے والے سریش گنگوال کی بیٹی آنچل نے تاریخ رقم کی ہے۔ آنچل نے اپنی پڑھائی کی بنیاد پر ایئرفورس تک کا سفر طے کیا ہے۔

 

سریش گنگوال نے بتایا سال 2013 میں اتراکھنڈ کے کیدارناتھ میں ہونے والے خوفناک سانحے کے بعد ، فضائیہ کا عملہ بہادری سے وہاں کے لوگوں کی مدد کر رہا تھا۔ اسے آنچل نے دیکھا تھا اور تب سے ہی فلائنگ آفیسر بننے کا خواب دیکھا تھا، جو اب پورا ہوا ہے۔

 

سریش نے کہا اپنے خوابوں کو پورا کرنے کے لیے آنچل نے کتابوں کو جمع کیا اور امتحان کی تیاری کی۔ سریش نے بتایا کہ آنچل چھٹی کوشش میں اس امتحان کو پاس کرنے میں کامیاب رہی۔ سریش پچھلے 25 سال سے چائے کی دوکان چلاتے ہیں۔

 

ہائی اسکول پاس کرنے والے سریش نے مزید کہا کہ میرے پاس اپنی بیٹی کی اسکول اور کالج کی فیس بھرنے کے لیے پیسے بھی نہیں ہوتے تھے۔ کئی بار میں نے لوگوں سے ادھار لیکر فیس بھری ہے۔

 

آنچل اب فضائیہ میں فائٹر پلین آڑائیں گی۔ آنچل کی کامیابی پر مدھیہ پردیش کے سی ایم شیوراج سنگھ چوہان نے ٹیوٹ بھی کیا ہے۔

شیوراج نے کہا، نمیچ میں چائے کی دوکان لگانے والے سریش گنگوال کی بیٹی آنچل اب فضائیہ میں فائٹر پلین آڑائیں گی۔ مدھیہ پردیش کو فخر محسوس کرانے والے بیٹی آنچل اب ملک کے فخر اور وقار کی حفاظت کے لیے اونچی اڑان بھرے گی۔ ببیٹی کو مبارکباد اور نیک تمنائیں۔

 

شیوراج نے ٹویٹر پر آنچل کے لئے ایک نظم بھی پوسٹ کی۔