Type to search

ٹی وی اور فلم

اسپلٹس ولا ایکس سے مشہور انمول چودھری ہے سنگل مدر

انمول چودھری

فلمی ڈسک،15جولائی (اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ماڈل ، اداکارہ اور اسپلٹس ولا 10 سے شہرت پانے والی انمول چودھری حال ہی میں اپنی ذاتی زندگی کو لیکر سرخیوں میں آگئی-

انہوں نے سوشل میڈیا پر خلاصہ کرکے سبھی کو حیران کردیا کہ وہ ایک بیٹے کی ماں بن چکی ہے-

جسکے مطابق وہ ایک کنواری سنگل ماں ہے- انہوں نے اپنی حمل کو دنیا سے چھپا رکھا تھا لیکن اب جا کر انہوں نے اس پر کھل کر بات کی ہے-

انہوں نے صاف کردیا کہ وہ اپنی اب تک کے سفر پر پچھتاوا نہیں بلکہ فخر ہے-

اکیلی ماں بننا بہت مشکل ہے۔ یہاں اپنے میٹریل اسٹیٹس کے بارے میں اپنی آس پاس کی سوسائٹی کو بتانا پڑتا ہے- ایسے میں اپنے بچوں کی پرورش اکیلے کرنا بہت مشکل ہوتا ہے-

اگر کوئی مشہور عورت ہے، تو اس کے لیے اور بھی مشکل ہوجاتا ہے- اسپلٹ ولا سے مشہور ہوئی انمول چودھری سنگل مدر ہے،

حال ہی میں نیوز پورٹل کے ساتھ بات چیت میں انمول نے اپنے بچے کو اپنی فیملی اور بوائے فرینڈ کے سپورٹ کے بنا رکھنے کے فیصلے اور اپنے مشکل سفر کے بارے میں خلاصہ کیا-

 

ایسے میں یہ خبر سن کر سب کو جھٹکا لگا تھا- انمول چودھری نے اب تک دنیا والوں سے اپنی حمل اور بچے کی بات چھپا کر رکھی تھی، لیکن حال ہی میں انہوں نے اسکے بارے میں کھل کر بات کی اور اپنا درد بھی شیئر کیا-

انمول چودھری نے بتایا کہ وہ ایک شخص کے ساتھ تعلقات میں تھی، دونوں کا رشتہ اچھا چل رہا تھا ، پر دو سال بعد ہی وہ الگ ہوگئے، الگ ہونے کے بعد ایک دن انمول چودھری کو پتہ چلا کہ وہ حاملہ ہے-

اس بارے میں انمول چودھری نے ٹائمز کو بتایا، یہ ڈسمبر 2019 کی بات ہے، میرے پیریڈ مس ہوگئے تھے اور تب مجھے پتہ چلا کہ میں حاملہ ہوں-

 

میں فوری فیصلہ کیا کہ وہ میں بچہ نہیں رکھوں گی، کیونکہ اس وقت میں ایک بچے کو نہیں سنبھال سکتی تھی، میں نے اپنے بوائے فرینڈ کو بھی یہی بتایا- تب ڈاکٹر نے میرا الٹرا ساؤنڈ کیا- اس وقت جب میں نے بچے کی دل کی دھڑکن سنی تو میں رونے لگی-

انمول چودھری نے مزید کہا، ‘میں پہلے اسقاط حمل کروانا چاہتی تھی ، لیکن بعد میں نے فیصلہ بدل دیا- میں الجھن میں تھی اور سوچ رہی تھی کہ کیا کروں-

تب میں نے بچہ رکھنے کا فیصلہ کیا- میرا بوائے فرینڈ اسکے خلاف تھا- لیکن میں اپنے فیصلہ پر قائم تھی-
دوستوں نے سوچا کہ میں ذیادہ ہفتے میں اپنا فیصلہ بدل لوں گی، پر ایسا نہیں ہوا- میرے والدین کو بھی میرے حمل کے بارے میں نہیں پتہ تھا-

صرف کچھ دوستوں کو معلوم تھا ، میں نے والدین کو اس لیے نہیں بتایا کیونکہ مجھے معلوم تھا کہ وہ اس پر ناراض ہونگے-
انمول چودھری نے کہا کہ بوائے فرینڈ سے بریک اپ کے بعد وہ تناؤ میں آگئی تھی اور خود کو ختم کردینا چاہتی تھی،
جس انسان سے میں نے پیار کیا اس نے ہی مجھے دھوکہ دیا تھا، پھر میں نے بچے کے بارے میں سوچا کہ مجھے اس بچے کے لیے جینا چاہیئے-

انمول چودھری نے بتایا کہ پہلے تو انہوں نے والدین کو حاملہ کے بارے میں نہ بتانے کا فیصلہ کیا تھا- پر جب کسی طرح ہمت کرکے والدہ کو بات بتائی تو وہ بری طرح ڈر گئی اور فوری ہی اسقاط حمل کروانے کو کہا۔

لیکن انمول اپنے فیصلے پر قائم رہی اور والدہ سے کہا، میں آپ سے پوچھ نہیں رہی، بتا رہی ہوں کہ میں حاملہ ہوں اور بے بی کو رکھوں گی-

 

انمول چودھری نے اس وقت کو بھی یاد کیا جب ان کے بوائے فرینڈ کو پتہ چلا کہ وہ اسقاط حمل نہیں کروا رہی ہے۔

انمول نے بتایا کہ تب ان کے بوائے فرینڈ نے انہیں خوب گالیاں دی اور کہا کہ اس کے دوست اسے چڑا رہے ہیں اور کہے رہے ہیں کہ وہ لڑکی جان بجھ کر ایسا کررہی ہے اور کسی دن تم پر ریپ کا الزام لگا دے گی-

انمول چودھری نے بتایا کہ تب انہوں نے اپنے بوائے فرینڈ سے کہا دیا تھا کہ بچہ رکھنا انکا فیصلہ ہے اور وہ انہیں زبردستی نہیں کرسکتا-

انمول چودھری اس وقت میں اپنے بچے کے ساتھ نوئیڈا میں بہن کے پاس رہ رہی ہے-انمول نے بتایا کہ انکی بہن نے ڈیلیوری میں بہت مدد کی تھی-

فی الحال وہ بنا شادی شدہ سنگل مدر بن کر خوش ہے اور اس مرحلے کو انجوائے کررہی ہے-

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *