Type to search

اسپورٹس

آسٹریلیائی اوپن: 21 سال کی صوفیہ کینن بنی چیمپین، اسپین کا خواب ٹوٹا

میلبورن،1فبروری(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) 21 سال کی صوفیہ کینن آسٹریلیا اوپن کی نئی چیمپئین بن گئی ہے۔ امریکہ کی اس کھلاڑی نے سال کا پہلا گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ جیت لیا ہے۔ صوفیہ کینن نے آسٹریلین اوپن کے فائنل میں اسپین کی گاربائن مگاروزا کو شکست دے کر خطاب پر قبضہ کیا۔ یہ انکے کیریئر کا پہلا گرینڈ سلیم خطاب ہے۔

آسٹریلین اوپن کے ویمن سنگلز کا فائنل ہفتہ کو میلبورن میں کھیلا گیا۔ اس میں 14ویں ترجیحی صوفیہ کینن کا مقابلہ گاربائن مگاروزا کے ساتھ ہوا ۔ دونوں ہی کھلاڑی پہلی بار کسی گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ کے فائنل میں پہنچی تھی۔ دونوں کے درمیان سخت ٹکر دیکھنے کو ملی ۔

میچ کا پہلا سیٹ نمبر ایک گاربائن نے جیتا، لیکن وہ اگلے دو سیٹ میں اپنی پوزیشن برقرار نہیں رکھ سکی۔۔ دوسری طرف ، صوفیہ کینن نے زبردست واپسی کرتے ہوئے صرف اگلے دو سیٹ جیتے، بلکہ میچ بھی اپنے نام کرلیا۔ انہوں نے یہ مقابلہ 4-6, 6-6-2, 6-2 سے جیتا۔ صوفیہ کو خطابی مقابلہ جتنے کے لیے دو گھنٹے تین منٹ تک جدوجہد کرنا پڑا۔

صوفیہ کینن 2002 کے بعد یہ خطاب جتینے والی سب سے کم عمر کی خاتون کھلاڑی ہے۔ ان سے پہلے 2002 میں جب امریکہ کی سرینا ولیمز نے یہ خطاب جیتا تھا، تب انکی عمر 20 سال سات مہینے کی تھی۔ 1998 میں پیدا ہوئی صوفیہ 2017 میں ہی پروفیشنل کھلاڑی بنی ہے۔

Tags:

You Might also Like