Type to search

تعلیم اور ملازمت

یو پی ایس سی کے پریلمنری امتحان میں ’ایم ایس آئی اے ایس‘ اکیڈمی کے 6 طلباء کامیاب

حیدرآ باد 13/جولائی (پریس ریلز)مسلم نوجوانوں کو ملک کی بیوروکریسی کا حصّہ بنانے کے لئے ایم ایس ایجوکیشن اکیڈمی نے تین سال قبل اپنے سی ایس آر انیشیٹو کے تحت جس ایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی کا قیام عمل میں لایا تھا اس کا ثمر آنا شروع ہو گیا ہے۔

گزشتہ شب یو پی ایس سی نے سیول سروسیز امتحان 2019 کے پریلمنری امتحان کا نتجہ جاری کردیا جس میں ایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی کے 6 طلباءکا نام بھی شامل ہے جنہوں نے یو پی ایس سی کے پریلمنری امتحان کوالیفائی کر لیا ہے۔

ایم ایس ایجوکیشن اکیڈمی کے سینر ڈائرکٹر محمد معظم حسین نے آج میڈیا کو ایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی کے طلبہ کی اس بڑی کامیابی کی اطلاع دی۔ انہوں نے بتایا کہ گذشتہ شب یو پی ایس سی کی طرف سے جاری کئے گئے سیول سروسیز پریلمنری امتحان میں کامیاب طلباءکی فہرست میں ایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی کے 6 طلباءکا نام بھی شامل ہے انہوں نے بتایا کہ ان کامیاب طلباءمیں 2 کا تعلق منگلور سے ایک دھنباد سے، دو حیدرآباد سے اور ایک الہ آباد سے ہے۔ انہوں نے ان کامیاب طلبہ کی جانکاری دیتے ہوئے بتایا کہ وہ یہ ہیں۔

1) محمد حسین عاسم (رول نمبر 1035337)
2) محمد عشرت (رول نمبر 1028678)
3) رومان احمد (رول نمبر 1042425)
4) صیف علی (رول نمبر 1023544)
5) محمد علیم الدین جنیدی (رول نمبر 8203530)
6) تفضیل احمد (رول نمبر 0613765)

ایم ایس کے سینر ڈائرکٹر محمد معظم حسین نے بتایا کہ یہ تمام طلباءایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی سے امتحان کی تیاری مکمل کی ہے۔

اکیڈمی میں ان میں تین طلباءکا قیام ، طعام اور کوچنگ کی پوری سہولیات دستیاب تھی۔ انہوں نے بتایا کہ ایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی میں ان طلباء کا انتخاب انٹرنس ٹسٹ اور انٹرویو کے بعد کیا گیا تھا۔ یہ انٹرنس ٹسٹ کل ہند سطح پر منعقد کئے گئے تھے اور ٹسٹ کے سنٹرس ملک کے 42 شہروس میں قائم کئے گئے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ میجنگ ڈائرٹر انور احمد ایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی کے نگران کار ہیں اور انکی رہنمائی میں اکیڈمی کے پیش رفت چل رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ 2020 تعلیمی شیشن کے لئے ایڈمیشن کی کارروائی شروع ہو چکی ہے اور ملک بھر کے 72 شہروں میں 21 جولائی 2019 کو کل ہند سطح پر ٹسٹ کا انعقاد کیا جارہا ہے۔
سینر ڈائرکٹر محمد معظم حسین نے کہاکہ ملک کی ترقی میں مسلمانوں کا تعاون ہو اسکو مد نظر رکھتے ہوئے ایم ایس نے 2017 میں ایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی کا قیام عمل میں لایا تھا۔ جہاں بہترین انفراسٹراکچر ۔ کتابوں کے ذخیرہ سے پر لائبریری اور تجربہ کار اساتذہ اور بیوروکریسی کی نگرانی میں ایم ایس کی کو شششیں روادوان ہے۔
واضح رہے کہ ایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی اقامتی کوچنگ اکیڈمی ہے جہاں کوچنگ کے ساتھ ساتھ قیام و طعام بالکل مفت ہے۔ ےہاں طلباءکو سیول سروسیز کوچنگ کے علاوہ طلباءکو 21ویں صدی کی لرنگ اسکلیس سے بھی واقف کرایا جاتا ہے جن میں میموری ٹرینگ ، اسپیڈ ریڈنگ اور مائینڈ میپنگ بھی شامل ہے۔

ابت ک اس اکاڈمی سے تین بیاچ فیض یاب ہو چکے ہیں۔ ایم ایس کے کوچنگ سے فیض پانے والے طلباءکا تعلق ملک کے مختلف حصوں سے ہے اور ان میں سے کئی ایک مختلف ریاستوں کے گروپس امتحان میں کامیابی پاچکے ہیں۔ جبکہ تلنگانہ ریاست کے ایک امیدوار ( وجاحت) کے امیدوار نے تلنگانہ فارسٹ رینج امتحان میں کامیابی حاصل کرکے فارسٹ رینچ افیسر کے طور پر انتخاب ہوچکا ہے۔ اسکے علاوہ دیگر تین طلباء (عباس، یعقوب پاشا اور امجد پاشا) کا بطور پنچائت سکریٹری تقرر ہو چکا ہے جبکہ بہار کے ایک طالب علم (اقبال انور) کا گروپ 1 میں تقرر ہوا ہے اور بہار میں اسکی بطور ریوینو افیسر بحالی ہوئی ہے۔

واضح رہے کہ مسلم نوجوانوں کو ملک کی بیوروکریسی کا حصّہ بنانے کے لئے ایم ایس ایجوکیشن اکیڈمی نے اپنے سی ایس آر انیشیٹو کے تحت ایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی کا قیام عمل میں لایا ہے جہاں طلباءکو مفت قیام و طعام کے ساتھ سیول سرویسس کی کوچنگ فراہم کرائی جاتی ہے۔

سینر ڈائرکٹر محمد معظم حسین نے بتایا کہ امسال ایم ایس ایجوکیشن اکیڈمی آئی اے ایس اکیڈمی کا انٹرنس ٹسٹ21 جولائی کو ملک بھر کے 72 شہروں میں منعقد ہو رہا ہے۔ ملک کے 23 ریاستوں میں یہ ٹسٹ منعقد کرائے جارہے ہیں۔ انہوں نے بتا یا کہ اس ٹسٹ میں شریک ہونے والے طلباء کو ایم ایس کی ویب سائیٹ

www.mseducationacademy.in

پر ایک آن لائن فارم پُر کرکے اپنے ٹسٹ سنٹر کا انتخاب کرنا ہوگا۔ تحریری امتحان میں کامیاب ہونے والے طلباءکو حیدرآباد / دہلی میں انٹرویو کے لئے بلایا جائے گا اور پھر میرٹ کی بنیاد پر انہیں ایم ایس آئی اے ایس اکیڈمی میں داخلہ دیا جائے گا۔ آن لائن فارم بھرنے کی اخری تاریخ 18 جولائی ہے۔

Tags:

You Might also Like

1 Comment

  1. Mohammed July 13, 2019

    Thank you MS….. you are providing great support to our Community youths and to our nation. Jazakallah.