Type to search

بین الاقوامی

سعودی عرب : سابق ولی عہد سمیت شاہی خاندان کے 3 افراد حراست میں

لندن،7مارچ(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) امریکی میڈیا رپورٹس کے مطابق ، گرفتار کیے گئے لوگوں میں سعودی کنگ کے بھائی بھی شامل ہے اور فی الحال گرفتاری کی وجہ نہیں بتائی گئی- ان میں دو لوگ ملک کی سب سے بااثر شخصیت میں شامل ہے- اس گرفتاری کو کراؤن پرنس محمد بن سلمان سے جوڑا جارہا ہے- سال 2017 میں بھی سعودی شاہی خاندان کے درجنوں ارکان ، وزیر اور کاروباریوں کو ریاض کے رٹزکارلٹن ہوٹل میں نظر بند کیا گیا ہے- انکی گرفتاری کے احکام ولی عہد نے دیئے ہیں، محمد بن سلمان کو سعودی کا اگل حکمران مانا جارہا ہے-
انکے والد سال 2016 میں انہیں ولی عہد شہزادہ اعلان کیا تھا- نیویارک ٹائمز اور وال اسٹریٹ جنرل کی رپورٹ کے مطابق یہ گرفتاریاں جمعہ کی صبح ہوئی ہے-
رپورٹ کے مطابق سعودی حکومت نے شاہ سلمان کے چھوٹے بھائی شہزادہ احمد بن عبدالعزیز، سابق ولی عہد محمد بن نائف اور شاہی خاندان کے اہم ترین فرد شہزادہ نواف بن نائف کو حراست میں لے لیا ہے۔
ان تینوں افراد کو جمعہ کے روز ان کے محلات سے حراست میں لیا گیا تاہم ان کی گرفتاری کی وجوہات کا علم نہیں ہوسکا۔