Type to search

ٹی وی اور فلم

سادھنا شوداسانی سالگرہ اسپیشل: ایک باکمال اداکارہ

سادھنا شوداسانی

نئی دہلی، یکم ستمبر (اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ہندی فلموں میں کئی اداکارائیں آئی اور وقت کے ساتھ انکی تصویر دھندلی ہوگئی- لیکن بالی ووڈ کی کی مایہ ناز اداکارہ سادھنا شیوداسانی اپنے وقت کی ایسی خوبصورت ادکارہ گذری ہے- جسے آج بھی لوگ انکی خوبصورتی اور اداکاری کے لیے یار کرتے ہیں- آج انکی سالگرہ کے موقع جانتے ہیں انکے بارے میں-

سادھنا شوداسانی کی پیدائش 2ستمبر 1941 کو کراچی میں ایک سندھی ہندو خاندان ہوئی تھی، سادھنا اپنے والدین کی اکلوتی اولاد تھی اور آٹھ سال کی عمر تک ان کی ماں نے انہیں گھر میں ہی تعلیم و تربیت دی ۔ سادھانا کا نام اس کے والد کی پسندیدہ اداکارہ سادھنا بوس کے نام پر رکھا گیا تھا۔ ان کے والد اور اداکار ہری شودسانی بھائی تھے جو اداکارہ‘ببیتا’ کے والد تھے۔

انہیں بالی ووڈ کی ہٹ اور سدا بہار کلاسک فلموں میں شراکت کے لئے سال 2002 میں آئیفا لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ ملا۔

اداکارہ سادھنا شوداسانی نے ماضی میں اپنی لازوال اداکاری سے انڈسٹری میں خوب نام کمایا جہاں انہوں نے متعدد فلموں میں راج کپور، دیوآنند، راجند کمارکے ساتھ بطور ہیروئن کام کیا، اور مقبولیت کے جھنڈے گاڑھے وہیں وہ بالی ووڈ انڈسٹری پر کئی دہائیوں تک راج کرتی رہیں۔

لڑکیوں کے درمیان چوڑی دار سلوار قمیض کا فیشن مشہور کرنے کا سہرا سادھنا کو ہی جاتا ہے- انکا ہیئر اسٹائل سادھنا کٹ نام سے آج بھی مشہور ہے- اس ہیئر کٹ کی کہانی بھی مزیدار ہے- دراصل سادھنا نے اپنے چوڑے ماتھے کو چھپانے کے لیے اس طرح کا ہیئر اسٹائل اپنایا کہ انکے بال ماتھے پر رہے- لیکن یہ اسٹائل اتنا مشہور ہوا کہ 60 اور 70 کے دہائی میں تو ہر لڑکی سادھنا کی طرح ہیئر اسٹائل رکھنے کی کوشش کرنے لگی-

سادھنا شوداسانی نے 1955 میں راج کپورکی فلم “شری 420’’ کے ایک مشہور گانے “مڑمڑ کہ نہ دیکھ مڑمڑکے” میں اپنا ڈیبیو کیاتھا۔ اس وقت ان کی عمر محض 15 برس تھی۔ بطور اداکارہ لو ان شملہ‘ ان کی ایسی پہلی فلم تھی جو ان کی منفرد پہچان کا سبب بنی۔ اسی فلم نے انہیں شہرت کی نئی بلندیاں عطا کیں۔

صرف 15 سال کی عمر میں انہوں نے کالج کے ڈرامہ میں حصہ لینا شروع کیا۔ انکا ٹیلنٹ ذیادہ دن تک نہیں چھپا ایک پروڈیوسر کی نظر ان پر پڑی اور انہیں ایک روپیہ ٹوکن اماؤنٹ دے کر ایک سندھی فلم بنانے کے لیے سائن کیا گیا۔

سادھنا شوداسانی 1960 سے 1970 کی دہائی کے اواخر تک اپنے وقت کی سب سے زیادہ معاوضہ لینے والی اداکارہ تھیں۔
وہ اپنے وقت کی سب سے خوبصورت اور ٹاپ اداکاراؤں میں سے ایک تھی- وہ سال 1981-1960 تک ایکٹیو تھی-
سدھانا نے 30 سے زائد کامیاب فلموں میں کام کیا جس میں “ہم دونوں ، وہ کون تھی ، راجکمار ، وقت ، میرا سایا، میرے محبوب ، انیتا ، سچائی اور ایک پھول دو مالی شامل ہے-

وہ اپنی تین سسپنس تھرلر فلموں سے مشہور ہوئی۔ جن میں وہ کون تھی؟ (1964) ، میرا سایا (1966) اور انیتا (1967) ، جسے راج کھوسلا کی ہدایت کاری میں بنی تھی۔

سادھنا شوداسانی نے 1966 میں ‘لو ان شملہ ‘ کے ہدایتکار رام کرشنا نیئر سے شادی کی تھی۔ دونوں کی ملاقات فلم کے سیٹ پر ہوئی۔ اس وقت سدھانا کی عمر صرف 16 سال تھی اور نیئر 22 سال کی تھے- نیئر سال 1995 میں انتقال کرگئے- انکے کوئی بچے نہیں تھے- وہ اکیلی رہے گئی- پھر انہیں بیماریوں نے گھیر لیا تھا- سدھانا کی موت کینسر کی وجہ سے 25 دسمبر 2015 کو ہوئی۔