Type to search

بین الاقوامی

پائلٹ نے مکئی کے کھیت میں اتارا جہاز، 233 لوگوں کی جان بچائی

ماسکو/16اگسٹ(ایجنسی) روس کے عوام کو اس معجزے کا احساس کیاجب ایک مسافرجہاز کو ہنگامی صورتحال میں مکئی کے کھیت میں اتارا گیا، جمعرات کو ایک روسی جہاز میں اڑان کے چند منٹ بعد ہی کچھ پردنے گھس گئے- پرندوں کے گھسنے کے ساتھ جہاز کو ماسکو کے پاس ایک مکئی کے کھیت میں اتارا گیا – اس جہاز میں 233 لوگ سوار تھے- وزرات صحت نے کہا کہ 23 لوگ زخمی ہوئے ہیں- جن میں نو بچے شامل ہے- انہوں نے خوشی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ راحت کی بات یہ رہی ہے کہ اس ایمرجنسی لینڈنگ میں کسی شخص کی جان نہیں گئی- انہوں نے کہا کہ جہاز کے انجن میں پرندے کے گھستے ہی وہ بند ہوگیا تھا- جسکے بعد اسے پاس کے ہی مکئی کے کھیت میں کامیابی کے ساتھ اتارا گیا-

 

اس واقع کے بعد روس کی میڈیا میں پائلٹ کی جم کر تعریف ہورہی ہے- ایک مقامی چینل نے جہاز کے پائلٹ دمیر یوسوپو کو ہیرو اور اس واقع کو معجزہ قرار کردیا ہے- انکے مطابق دمیر ایک ہیرو ہے جنہوں نے 233 لوگوں کی جان بچائی – چینل نے کہا کہ دمیر نے بنا لینڈنگ گیئر اور ایک ناکام انجن کے ساتھ ایک جہاز کو کامیابی کے ساتھ زمین پر اتارا- کچھ لوگوں نے اس واقع کا مقابلہ یوایس میں ہوئے اس واقع سے کیا جہاں سال 2009 میں یوایس ایئرویز کے ایک جہاز کو ایمرجنسی میں ہیوڈسن ندی میں اتارا گیا تھا- جہاز میں سوار ایک مسافر نے مقامی چینل سے بات کرتے ہوئے کہا کہ فلائٹ، ٹیک آف کے کچھ منٹوں بعد بری طرح سے ہلنے لگا تھا-

 

مسافر کے مطابق پانچ سکنڈ کے اندر ہی جہاز کی دہائیں طرف کی لائٹ جلنے لگی اور کچھ جلن کی بدبو آنے لگی، جیسے ہی جہاز پر اتارا، سبھی مسافر تیزی سے بھگانے لگے، یورال ایئرلائن کا ایئربس اے 321 طیارہ 226 مسافروں اور سات ارکان کو ماسکو کے زکوفکسی ہوائی اڈے سے روس – انیکسیا کریمیا کے سمفیرپول لے جا رہا تھا۔ تبھی اسکے انجن میں پرندہ پھنس گئے تھے۔

Tags: