Type to search

صحت

ادرک سی دیکھنے والی یہ ہلدی بیماریوں کو رکھے گی دور

ہیلتھ ڈسک،(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ہلدی ہندوستانی کھانے کا اہم حص ہے۔ چاہے دال ہو یا پھر سبزی ان میں ہلدی کا استعمال ضرور ہوتا ہے۔ عام طور پر کھانے میں ہلدی پاؤڈر کا ہی استعمال کیا جاتا ہے۔ لیکن سردیوں کے سیزن میں مارکیٹ میں کچی ہلدی بھی دستیاب ہوجاتی ہے۔ ادرک سی دیکھنے والی اس ہلدی میں اتنے خصوصیات ہوتے ہیں کہ ٹھنڈ میں بھی یہ آپ کو فٹ بنائے رکھنے میں مدد کرئے گی۔

سوزش میں انٹی بیکٹیریل اور اینٹی بیکٹیریل مرکب ہوتے ہیں، جو ماحول میں موجود بیکٹریا کو جسم سے دور رکھنے میں مدد کرتے ہیں۔ اس وجہ سے ٹھنڈ کے موسم میں عام طور پر ہونے والی زکام اور کھانسی جیسی بیماریوں کو جکڑ نہیں پاتی ہے۔ اگر کوئی اس سے متاثر ہے اور اگر وہ کچی ہلدی روز کھائے تو اسے ہلدی ٹھیک ہونے میں بھی مدد ملتی ہے۔ روز کچی ہلدی کھانے سے جسم میں اینٹی آکسیڈینٹ انزائمز کو فروغ ہوتا ہے،جو جسم کی مدافعت کو بھی فروغ ملتا ہے۔ اس سے جسم کو وائرل انفیکشن سے لڑنے میں مدد ملتی ہے۔

کچی ہلدی خون کو شریانوں میںموجود انڈوتھیلیم کے فنکشن کو سدھارتی ہے۔ اس سے بلڈ پریشر ، بلڈ جمنا، جیسے کئی مسائل دور رہتے ہیں۔ ساتھ ہی میں یہ سوجن اور آکسیڈیشن کو کم کرتی ہے۔ یہ سبھی فیکٹر کنٹرول میں رہنے پر دل کی بیماری ہونے کا خطرہ بھی اپنے آپ کم ہوجاتا ہے۔
سردیوں میں گٹھیا کے مریضوں میں درد و سوجن کے مسائل بڑھ جاتی ہے۔ اس پریشانی کو کچی ہلدی کم کرسکتی ہے اور یہ بات کئی اسٹیڈیز میں بھی ثابت ہو چکی ہے۔ ڈپریشن کی وجہ سے برین ڈریوڈ نویروتروپیک فیکٹر (بی ڈی این ایف) میں کمی ہے۔ کچی ہلدی اس فیکٹر کو کم کرنے میں کافی مدد کرتی ہے۔ یہ نیورو ٹرانسمیٹر سیروٹونن اور ڈوپامائن کو بوسٹ کرتا ہے جو ڈپریشن کو کم کرنے میں مدد کرتے ہیں۔ ایسے میں ڈپریشن سے متاثر رہے ہیں، انہیں روز کچی ہلدی کھانا چاہیئے۔

سردیوں عمل انہضمام عام طور پر آہستہ ہوجاتا ہے جس سے اکثر لوگ پیٹ خراب ہونے کی شکایت کرتے ہیں۔ کچی ہلدی اس حالت میں راحت دیتی ہے اور کھانے کے بہتر طریقے سے ہاضمہ میں مدد کرتی ہے۔ ویسے اگر آپ روز کچی ہلدی کھائیں تو اسکین سے جوڑی بیماری بھی دور رہے گی۔ بلڈ کو صاف کرنے والی کوالٹی کی وجہ سے کچی ہلدی اسکین میں بیکٹریا کو پنپنے سے روکتی ہے جس سے مہاسے نہیں ہوتے۔

Tags: