Type to search

اسپورٹس

آئی ایس ایس ایف ورلڈ کپ میں ہندوستانی خاتون نشانے باز راہی سرنوبٹ نے 25 میٹر پستول میں سونے کا تمغہ جیتا

نشانے باز راہی سرنوبٹ

ورلڈ کپ میں خواتین کے 25 میٹر پستول ایونٹ میں نشانے باز راہی سرنوبٹ چیمپئن بنی
ورلڈ کپ میں چار تمغے ہندوستانی شوٹر جیت چکے
منوبھاکر ساتویں مقام پر، ٹوکیو اولمپکس سے پہلے یہ آخری ٹورنامنٹ


اسپورٹس ڈسک،29 جون (ذرائع) آئی ایس ایس ایف ورلڈ کپ: کروشیا میں جاری آئی ایس ایس ایف شوٹنگ ورلڈ کپ میں ، ہندوستانی نشانے باز راہی سرنوبٹ نے تاریخ رقم کرتے ہوئے 25 میٹر پستول ایونٹ میں گولڈ میڈل جتنے کا کارنامہ کردیکھایا۔

موجودہ آئی ایس ایس ایف ورلڈ کپ میں یہ ہندوستان کے لئے یہ پہلا گولڈ میڈل ہے۔ اس سے پہلے ہندوستانی شوٹر نے ایک سلور اور 2 برونز میڈل جیتے ہیں۔ وہیں منوبھاکر ساتویں مقام پر ہی۔

 

 

شوٹنگ ورلڈ کپ میں ہندوستان کو یہ پہلا گولڈ میڈل ملا ہے۔ فائنل میں رانی نے 40 میں سے 39 پوائنٹس حاصل کرکے گولڈ میڈل پر قبضہ جمانے میں کامیاب رہی۔

فائنل راؤنڈ میں فرانس اور روس کے نشانے باز سے آگے نکل کر راہی نے گولڈ پر نشانہ بنایا۔

اسکے علاوہ منو بھاکر فائنل میں کچھ خاص نہیں کرپائی اور 7ویں نمبر پر رہی۔ بتادیں کہ شوٹنگ ورلڈ کپ کی 10 میٹر ایئر پستول مسکڈ ٹیم ایونٹ میں سوربھ چودھری اور منوبھاکر کی جوڑی نے چاندی کا تمغہ جتنے میں کامیاب رہے۔

منو بھاکر ، حالانکہ 11 کے مایوس کن اسکور کے ساتھ فائنل سے جلدی باہر ہوگئی۔ وہ بلغاریہ کی وکٹوریہ چاکا سے شوٹ آف میں ہار گئیں۔

 

راہی سرنوبٹ (30سالہ) نے کل 591 کے ساتھ دوسرے مقام پر کوالیفائی کرنے کے بعد 39 کا آخری اسکور بنایا۔ فائنل میں شاندار مظاہرہ کیا، انہوں نے تیسری ، چوتھی، پانچویں اور چھٹی سیریز میں صحیح اسکور بناکر گولڈ اپنے نام کیا۔
فرانس کے میتھلڈ سلور جتنے میں کامیاب رہے، انہوں نے فائنل میں 31 کا اسکور بنایا۔

 

اس سے قبل ہندوستان نے ایک چاندی اور دو کانسی کے تمغے جیت چکا ہے۔ سرنوبٹ کی طرف سے حاصل کیا گیا گولڈ میڈل ورلڈ کپ میں ہندوستان کا پہلا گولڈ میڈل ہے۔ سوشل میڈیا پر بھی نشانے بازی میں گولڈ جیتنے پر لوگ کمنٹ کرکے مبارکباد دے رہے ہیں۔

اولمپکس کے لیے جانے سے پہلے ہندوستانی شوٹروں کے لئے یہ آخری ٹورنامنٹ ہے۔ ٹوکیو اولمپکس میں بھی ہندوستانیی شوٹروں سے کافی امیدیں ہیں۔

راہی کی پیدائش 30 اکتوبر 1990 کو مہاراشٹر کے کولہا پور میں ہوئی۔