Type to search

قومی

پرکاش راج نے حکومت پر کی تنقید، کہا۔ تین ہزار کروڑ روپے کے مجسموں کی ضرورت نہیں ہے بلکہ۔ ۔ ۔

نئی دہلی،21جنوری(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ساؤتھ اور بالی ووڈ کی فلموں میں اپنی ایکٹینگ سے سب کا دل جیتنے والے ایکر پرکاش راج نے قومی شہری رجسٹر کو لیکر تنقید کی ہے۔ انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ ملک کو بے روز گار نوجوانوں کے رجسٹر کی ضرورت ہے نہ کہ این آر سی کی۔ پرکاش راج کے اس بیان نے لوگوں کی خوب توجہ کھینچی ہے۔ اسکے علاوہ انہوں نے ملک میں موجودہ حالات کو لیکر بھی حکومت پر تنقید کی۔ پرکاش راج نے یہ بیان قومی آبادی رجسٹر، شہریت ترمیمی قانون اور قومی شہری رجسٹر کے خلاف ہوئی ریلی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا تھا۔

پرکاش راج نے کہا کہ ملک کو تین ہزار کروڑ روپے کے مجسموں کی ضرورت نہیں ہے۔ اور اگر حکومت کوئی رجسٹر چاہتی ہے تو اسےملک کے بے روزگار نوجوانوں اور تعلیم یافتہ بچوں کی رجسٹر بنانی چاہیئے۔ ایکٹر نے ریلی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا، یہ ملک ہم سبھی کا ہے۔۔۔ ہمیں تین ہزار کروڑ روپے کا مجسمے نہیں چاہیئے۔ اگر حکومت کوئی رجسٹر چاہتی ہے تو اسے ملک کے بے روز گار نوجوانوں اور تعلیم یافتہ بچوں کی رجسٹر بنانی چاہیئے۔ اسکے علاوہ پرکاش نے اپنے بیان میں کہا کہ اگرچہ حکومت چاہتی ہے کہ مظاہرے پرتشدد ہو، لیکن مظاہرین کو خود کو عدم تشدد مظاہرے ک محدود رکھنا چاہیئے۔

بتادیں کہ پرکاش راج اپنےٹیوٹ اور بیباک بیانوں کو لیکر خوب سرخیوں میں رہتے ہیں۔ موجودہ مسائل پر انکے ٹیوٹ سوشل میڈیا پرخوب وائرل بھی ہوتے ہیں۔ گذشتہ دن بھی پرکاش راج وزیراعظم کی طرف سے معنقد کی گئی ’امتحان پے چرچہ‘ کو لیکر بھی تنقید کی تھی۔ انہوں ٹیوٹ کرکےکہا، امتحان پے چرچہ کرنے سے پہلے ڈگری کے کاغذ دیکھاؤ۔

(یہ خبر بھاشا سے لی گئی)

Tags:

You Might also Like