Type to search

اسپورٹس

کھلاڑیوں کو جلد سے جلد نئی ہدایات کی عادت ڈالنی ہوگی، اب نہیں کرسکیں گے یہ سب

دبئی،23مئی (بھاشا) کوویڈ 19 وبا کے بعد جب کھیل شروع ہوگا تو بین الاقوامی کرکٹروں کو اپنی کچھ عام عادتوں کو بدلنا پڑے گا، کیونکہ حقیقت میں آئی سی سی کے نئے ہدایات انکے لیے جی کے جنجال سے کم ہونے نہیں جارہے، کھلاڑیوں کو ان سے تال میل بیٹھانے میں خاص وقت لگے گا، مثلا انہیں پریکٹس کے دوران بیت الخلا جانے اور میدانی امپائروں کو اپنی کیپ یا سن گلاس سونپنے کی اجاز نہیں ہوگی- بین الاقوامی کرکٹ کونسل (آئی سی سی ) نے جمعہ کو کورونا وائرس کے اس دور میں بین الاقوامی ٹیموں اور کھلاڑیوں کے لیے ہدایات جاری کیے اور سبھی کو جلد سے جلد اسکی عادت ڈال لینا ہوگی بین الاقوامی کرکٹ کونسل کے ہدایات کے مطابق کھلاڑی اپنے نجی سامان جیسے کیپ، تولیہ، سن گلاس، نپسرس اور امپائر یا ساتھیوں کو نہیں سونپ سکتے اور انہیں جسمانی دوری بنائے رکھنی ہوگی-

حالانکہ یہ واضح نہیں کیا گیا ہے کہ کھلاڑیوں کا سامان کون رکھے گا، یہی نہیں امپائروں کو بھی گیند کو پکڑتے وقت دستانوں کا استعمال کرنا ہوگا- کھلاڑی اپنی کیپ اور دھوپ کے چشمے کو میدان پر نہیں رکھ سکتے کیونکہ اس سے پینالٹی رن جاسکتے ہیں جیسے کہ ہیلمٹ کے معاملے میں ہوتا ہے- آئی سی سی اسکے ساتھ ہی چاہتی ہے کہ کھلاڑی میچ سے پہلے اور میچ کے بعد ڈریسنگ روم میں کم وقت گذارے-

 

آئی سی سی کرکٹ کمیٹی پہلے ہی گیند پر تھوک لگانے پر پابندی لگانے کی سفارش کرچکی ہے اور اب کھلاڑیوں کو گیند چھونے کے بعد آنکھیں، ناک اور منہ کو نہ چھونے کی صلاح دی گئی ہے- اور گیند کے رابطے میں آنے کے بعد اپنے ہاتھ صاف کرنے کے لیے کہا گیا ہے- پریکٹس کے دوران بھی کھلاڑیوں پر پریشانیاں بڑھ سکتیہے کیونکہ انہیں بیت الخلا کا استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہوگی-