Type to search

قومی

بنگلور میں احتجاجی جلسہ میں پاکستان زندہ آباد کے نعرے لگانے والی لڑکی کے خلاف غداری کا مقدمہ درج

بنگلور،21فروری(بھاشا) بنگلور میں ایک پروگرام میں اے آئی ایم آئی ایم کے صدر اور ایم پی اسد الدین اویسی کو عجیب حالات کا سامنا کرنا پڑا۔ انکے جسلہ عام میں ایک خاتون نے اسٹیج سے پاکستان زندہ آباد اور نعرہ دہراتی رہی۔ آخر کار پولیس کو اسے اسٹیج سے ہٹانا پڑا۔ بعد میں اویسی نے صفائی دی کہ اس خاتون سے انکی پارٹی کا کوئی تعلق نہیں ہے۔ بنگلور پولیس نے نعرہ لگانے والی خاتون کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کیا گیا۔

بنگلور میں شہریت ترمیمی قانون ،قومی شہری رجسٹر، اور قومی آبادی رجسٹر کے خلاف میں جمعرات کو ایک پروگرام منعقد کیا گیا۔ اس میں ایک خاتون نے ایم آئی ایم کے صدر اسدالدین اویسی کی موجودگی میں پاکستان زندہ آباد کا نعرہ لگایا۔ حالانکہ اویسی نے خاتون کے اس رویہ کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا، ہم ہندوستان کے لیے ہیں۔

آئین بچاؤ بینر کے تحت منعقد پروگرام کو منتظمین نے اویسی کے اسٹیج پر پہنچنے کے بعد امولیا لیونا نام کی اس خاتون کو بھیڑ کو مخاطب کرنے کے لیے بلایا، خاتون نے وہاں موجود لوگوں سے اپنے ساتھ پاکستان زندہ آباد کا نعرہ لگانے کو کہا۔ اس پر اویسی اس سے مائیک چھیننے کے لیے بڑھے اور دیگر لوگ بھی خاتون کو ہٹانے کی کوشش کرنے لگے۔ لیکن خاتون آڑی رہی اور بار۔بار پاکستان زندہ آباد دہراتی رہی۔

بعد میں پولیس آگے بڑھی اور خاتون کو اسٹیج سے ہٹا دیا۔ اسکے بعد اویسی نے لوگوں کو مخاطب کیا اور کہا کہ وہ خاتون سے متفق نہیں ہے۔ انہوں نے کہا، نہ تو میرا اور نہ میری پارٹی کا اس خاتون سےکوئی تعلق ہے۔ منتظمین کو اسے یہاں نہیں بلانا چاہیئے تھا۔ اگر مجھے یہ پتہ ہوتا تو میں یہاں نہیں آتا۔ ہم ہندوستان کے لیے ہے اور ہم کسی بھی طرح دشمن ملک کو حمایت نہیں کرتے۔ ہمار پوری تحریک ہندوستان کو بچانے کے لیے ہیں۔

وہیں جے ڈی (ایس) کے کونسلر عمران پاشاہ نے دعوی کیا کہ خاتون کو پروگرام میں خلل ڈالنے کےلیے حریف گروپ نے بھیجا تھا۔ انہوں نے کہا کہ خاتون مخاطب کرنے والوں کی فہرست میں شامل نہیں تھی اور پولیس کو معاملے کی جانچ سنجیدگی سے کرنی چاہیئے۔ جمعرات کو دیر رات بنگلور پولیس نے نعرہ لگانے والی خاتون کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کرلیا۔

Tags:

You Might also Like