Type to search

تلنگانہ

مساجد کھولنے سے پہلے اویسی نے مسلمانوں سے کی اپیل

حیدرآباد،3جون(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) کورونا وائرس سے ملی ڈھیل اور ان لاک 1 پلان کے تحت 8جون سے ملک بھر میں مذہبی مقامات کو کھولنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ ایسے میں آل انڈیا مجلس اتحادالمسلمین کے چیف اور لوک سبھا کے رکن بیرسٹر اسد الدین اویسی نے مساجدوں کو کھولنے سے متعلق ایک اپیل کی ہے۔ انکا کہنا ہے کہ اب جب مساجد کھولنے والی ہیں، تو مسلم کمیونٹی کے لوگوں اور مساجدوں کے لوگوں اور مساجدوں کے مفتیوں کو کورونا وائرس کے درمیان جینے کے لیے نئی عادتیں اپنا لینی چاہیئے اور نئے اصول بنانے چاہیئے۔

-Explain to senior citizens & people with comorbidities that it’s best to avoid congregations at least till the end of June
-Offer wazu at home, keep the toilets & wazu facilities in mosques closed
-Maintaining a gap between 2 namazis during congregational prayers [3/n]

— Asaduddin Owaisi (@asadowaisi) June 2, 2020

چہارشنبہ کو اویسی نے ٹیوٹر پر اپنی بات رکھی۔ انہوں نے کہا کہ مساجدوں کو مفتیوں کو چاہیئے کہ کورونا وائرس کے دور میں وہ نمازیوں کے لیے نئے اصول بنائے۔ انہوں نے ٹیوٹ میں لکھا، یہ وائرس کہیں نہیں جارہا ۔ ایسے میں ہمیں یہ طے کرنا ہوگا کہ ہم 8 جون سے کھل رہے مذہبی مقامات پر ضروری بچاؤ کریں۔ میں نے مسلمانوں اور خاص کر مفتیوں سے یہ کچھ اصول پر عمل کرنے کی درخواست کی ہے۔

I request @TelanganaCMO@TelanganaDGP & Chief Secy., Telangana to call for a meeting of ALL religious scholars from across communities so that we can evolve certain social distancing guidelines that should be followed in all places of worship in the state. [1/n]

— Asaduddin Owaisi (@asadowaisi) June 2, 2020

مساجدوں سے قالین ہٹا لی جائے اور لوگ فرش پر نماز پڑھیں۔ سینئر شہری اور کسی بیماری سے متاثر رہے لوگوں کو جون کے آخری تک بھیڑ بھاڑ میں آنے سے منع کریں۔ وضو گھر سے کرکے آئے۔ مساجدوں میں وضو اور ٹائلٹ کی سہولت بند رکھیں۔ نماز پڑھے جانے کے دوران سوشل ڈیسٹینسنگ پر عمل کرتے ہوئے دوری بنائے رکھیں۔

 

اویسی نے اسکے علاوہ مذہبی مقامات کے کھولنے کے موقع پر انہوں نے سبھی مذہبی مقامات کے لیے اصول لانے کی بھی تجویز رکھی۔ انہوں نے ٹیوٹ میں کہا، میں تلنگانہ کے وزیراعلی، تلنگانہ ڈی جی پی اور چیف سکریٹری سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ تمام مذہبی برادریوں کے بڑے لوگوں کے ساتھ میٹنگ بلائیں تاکہ ریاست کے ہر مذہبی مقام پر سوشل ڈیسٹینسنگ سے جڑے نئے اصول بنائے جاسکے۔

 

بتادیں کہ مرکزی حکومت نے پچھلے ہفتے کورونا وائرس لاک ڈاؤن کو 30 جون تک بڑھانے کا اعلان کیا تھا لیکن اس دوران بہت ساری رعایت دی گئی ہے۔ ملک کو دھیرے دھیرے کھولنے کے لیے ان لاک 1 پلان لایا گیا ہے۔ جس میں 8 جون سے مذہبی مقامات کھولے جانے کا اعلان بھی ہے۔

Tags:

You Might also Like