Type to search

تلنگانہ

تلنگانہ حکومت نے ریاست میں فی الحال این پی آر پر روک لگائی

حیدرآباد،27فروری(ذرائع / اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) تلنگانہ میں سی اے اے،  این پی آر  اور این سی آر کو لیکر کافی کشمکش بنی ہوئی تھی۔ حال میں تلنگانہ ہوئی بلدی انتخابات کے نتائج کے بعد کے چندر شیکھر راؤ نے کہا تھا کہ تلنگانہ میں ان قانون پر عمل نہیں   ہوگا اور لیکن اب این پی آر پر  فی الحال روک لگانے کی بات سامنے آرہی ہے۔ بتادیں کہ کے سی آر دہلی سے واپس ہوئے ہیں۔

 تلنگانہ کے مسلمانوں اور غریب لوگوں کے لیے ایک بڑی راحت کے طور دیکھا جارہا ہے کہ ریاستی تلنگانہ حکومت نے فی الحال قومی آبادی رجسٹر (این پی آر) کے کام کو  روکنے کا فیصلہ کیا ہے۔

نیو انڈین ایکسپرس کی رپورٹ کے مطابق، ٹی آر ایس حکومت نے اسمبلی میں ایک قرارداد منظور کرئے گا، جس میں مرکز سے کہا جائے گا کہ وہ 2020 کی مردم شمار کے لیے تجویز  کے بجائے این پی آر کے پرانے فارمیٹ کو لاگو کریں۔

وزیراعلی کے چندرشیکھر راؤ کے قریبی ذرائع کے حوالے سے ، انڈین ایکسپریس نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت این پی آر کے نئے فارمیٹ کے خلاف تھی۔ ذرائع کے مطابق حکومت آئندہ بجٹ سیشن میں مرکز کے این پی آر کے نئے فارمیٹ کے ساتھ ساتھ شہریت ترمیمی ایکٹ (سی اے اے) کے خلاف ایک تجویزکے ساتھ مشورہ دینے کے لیے ایک اور تجویز اپنائے گی۔

ریاستی حکومت نے پارلیمنٹ میں سی اے اے کی مخالفت کی ہے اور وہ جارحانہ سوالات کے بنا پرانے فارمیٹ میں این پی آر کا کام بھی کرنا چاہتی ہے۔

مغربی بنگال اور کیرالہ نے این پی آر کے کام کو روکنے کا فیصلہ کیا ہے اور تلنگانہ اس کو فالو کرئے گا۔ ذرائع نے کہا کہ حالانکہ ریاست این پی آر کے کام کو روک نہیں سکتے ہیں۔ لیکن این پی آر کے تعلق میں سبھی سرگرمیوں کو روکنے کے قدم سے مرکز پر نئے این پی آر فارمیٹ میں کچھ ترمیم کرنے کا دباؤ بنائے گی۔

اس درمیان ایک سینئر آئی اے ایس اہلکار نے این پی آر کا کام کرنے کے احکام جاری کیے، جب ٹی ایس نے اسے ہولڈ پر رکھنے کا فیصلہ کیا، کچھ وقت پہلے اسے جی اے ڈی سے باہر نکال دیا گیا تھا۔

بتادیں کہ اس قانون کو لیکر ملک بھرمیں مخالف مظاہرے ہورہے ہیں، حیدرآباد میں بھی کئی بار احتجاجی جلسے اور ریالی نکالی جاچکی ہے۔

Tags:

You Might also Like