Type to search

تعلیم اور ملازمت

مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی میں نیاک کی ٹیم کی آمد

اردو یونیورسٹی نیاک ٹیم

مانو المونی ایسوسی ایشن کے وفد کی نمایندگی


حیدرآباد 15/دسمبر (پریس نوٹ) مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی اردو ذریعہ تعلیم سے ترقی کے خواہشمند تشنگان علم کی پیاس بجھانے کا واحد قومی ادارہ ہے مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے انجمن طلباے قدیم کی جانب سے آج مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی میں نئی دہلی سے آنے والی این اے اے سی ٹیم کے ارکان کے ساتھ نمائندگی کی گئی۔

 

انجمن طلبہ قدیم کے صدر جناب اعجاز علی قریشی نے سید حامد لایبریری میں منعقدہ اجلاس میں تنظیم کے نمائندہ وفد کے ہمراہ شرکت کی اور ین اے اے سی( نیاک) کمیٹی سے مطالبہ کیا کہ وہ اردو میڈیم کے طلباء کو ترقی کے مساویانہ مواقع فراہم کرنے کے لئے اس بات کو یقینی بنائیے کے نیشنل ایلیجیبلیٹی ٹسٹNET نیٹ کا امتحانی پرچہ اردو میں بھی فراہم کیا جائے تاکہ آگے کی تعلیم اور تحقیق کے لیے اردو یونیورسٹی کے طلباء نیٹ کی اہلیت حاصل کرتے ہوئے اپنا تعلیمی سفر جاری رکھ سکیں۔

 

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ گزشتہ دو دنوں سے یو جی سی کی ین اے اے سی کی ٹیم یونیورسٹی کے معیار کی جانچ کے لیے اردو یونیورسٹی کے مطالعاتی دورے پر آئی ہوئی ہے آج نیاک کی ٹیم کے ساتھ انجمن طلبہ قدیم کے وفد کی ملاقات ہوئی جس میں اردو یونیورسٹی سے تعلیم حاصل کرنے کے بعد زندگی کے مختلف شعبہ جات میں کارکردگی انجام دینے والوں پر مشتمل انجمن طلباء قدیم کے وفد نے نیٹ کی ٹیم کو واقف کروایا کہ اردو یونیورسٹی سے تعلیم نے ان کی زندگیوں کو بدلنے میں اہم کردار ادا کیا ہے اور یہ کہ مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی ملک بھر کے لاکھوں اردو ذریعہ تعلیم کے طلباء کی علمی پیاس بجھانے کا واحد بڑا مرکز ہے جو اپنے قیام کے پچیس برس مکمل کرنے جارہا ہے اور اردو طلباء کی امیدوں کا قومی مرکز ہے۔

 

اس یونیورسٹی کی ترقی کیلئے انجمن طلباء قدیم ہر ممکنہ دست تعاون دراز کرنے کے لئے تیار ہے انجمن طلباء قدیم کے وفد میں اعجاز علی قریشی کی صدارت میں واحد علی خان، ایوب خان، ایم اے باسط، کریم خان، الجاج الدین، محمد عبدالقیوم، سید اعجاز ، افروز بیگم بھی شامل تھے۔

 

مانو المونی ایسوسی ایشن کی جانب سے مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کی اردو دان طبقہ تک رسائی کو بڑھانے کے لئے کی جانے والی اسکول سے لیکر کالجز تک چلایی جانے والی مختلف سرگرمیوں سے بھی آگاہ کیا گیا

Tags:

You Might also Like