Type to search

اسپورٹس

ریو المپکس کی ناکامی بھولانا چاہتی ہوں: سویتا

My best Savita Punia

اسپورٹس ڈسک، 16 جون(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ہندوستانی خاتون ہاکی ٹیم کی گول کیپر سویتا پنیا نے کہا کہ انکا بہترین مظاہرہ ابھی باقی ہے اور انکی ٹیم ٹوکیو اولمپک میں تاریخ بنا کر ریو اولمپک کی ناکامی کو بھولانا چاہتی ہے- ہندوستانی خاتون ہاکی ٹیم نے 36 سال بعد ریو اولمپک 2016 کے لیے کوالیفائی کیا تھا لیکن گروپ مرحلے سے ہی باہر ہوگئی-

 

ہندوستانی ٹیم ایف آئی ایچ عالمی رینکنگ میں نویں مقام پر ہے- پچھلے 12 سال سے ہندوستانی ٹیم کے لیے اہم کھلاڑی رہی سویتا نے کہا کہ کیریئر کی شروعات کے مقابلے میں میرا اعتماد اور کھیل کو لیکر جنون کم تھا- وقت کے ساتھ کھیل سے میرا پیار بڑھ گیا ہے اور میرا ماننا ہے کہ ابھی میرا بہترین باقی ہے-

سویتا نے ہاکی انڈیا کی طرف سے جاری بیان میں کہا، میرا بہترین مظاہرہ ابھی باقی ہے- میں ٹوکیو اولمپک میں اپنی ٹیم کے لیے بہترین مظاہرہ کرنا چاہتی ہوں تاکہ ہم ریو اولمپک کی ناکامی کو بھولا سکیں- اس وقت ہم بالکل نئے تھے اور ہم نے غلطیاں کی لیکن ٹوکیو میں 2021 میں ہمارے پاس تاریخ بنانے کا موقع ہے-

ہندوستانی ہاکی ٹیم لاک ڈاؤن کے دوران یہاں کے سائی سنٹر پر تھی- سویتا نے کہا کہ اس دوران انہوں نے دوسری ٹیموں کے کھیل کا تجزیہ کیا- انہوں نے کہا کہ اس بریک میں انہیں صبر سیکھایا اور زندگی میں چھوٹے چھوٹے لمحوں میں خوشی ڈھونڈنے کی اہمیت سمجھائی-

سویتا پنیا کی پیدائش 11 جولائی 1990 کو ہریانہ کے ضلع سرسا میں ہوئی- انہیں بہترین تعلیم کے لیے ڈسٹرک ہیڈکوارٹر بھیجا گیا- انہوں نے اسپورٹس اکیڈمی میں داخلہ لیا- سویتا کو انکے دادا مہندر سنگھ نے حوصلہ افزائی کہ وہ ہسار میں واقع اسپورٹس اتھاریٹی آف انڈیا (ایس اے آئی) میں شامل ہو-

سویتا کے ابتدائی سالوں میں سندر سنگھ کھراب نے انہیں کوچینگ دی- شروع میں سویتا نے کھیل میں دلچسپی نہیں دیکھائی لیکن بعد میں انکے والد نے تقریبا 20 ہزار روپے اسپورٹس کٹ پر خرچ کیے تو سویتا نے کھیل میں سنجیدگی لی اور ایک نئے طریقہ سے کھیل کو دیکھنا شروع کیا-

Tags: