Type to search

تعلیم اور ملازمت

ایم ایس کریٹیو اسکولس کا چار روزہ سالانہ پروگرام ”اخلاق فیسٹ“ باغ عامہ کے للیتا کلااتھورنیم میں شروع

اسٹیج شو اور اسٹالس کے ذریعہ سا معین میں نیچر کے تئیں بیداری پیدا کرنے کی سعی


حیدرآباد، 28/جنوری(پریس ریلز) ایم ایس کریٹیو اسکولس کا چار روزہ سالانہ پروگرام ”اخلاق فیسٹ“ آج سے باغ عامہ کے للیتا کلااتھورنیم میں شروع ہوا۔ جو 31جنوری 2020تک جاری رہے گا۔ ایم ایس ایجوکیشن اکیڈمی کے سینئر ڈائرکٹر محمد معظم حسین میڈیا کو اسکی اطلاع دیتے ہوئے بتایا کہ ایم ایس اسکول کے طلباء اپنے سالانہ پروگرام کو اخلاق فیسٹ کے طور پر مناتے ہیں اور ہر سال یہ پروگرام تھیم (موضوع) پر مبنی ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ امسال کا موضوع نیچرہے۔اس موضوع پر طلباء اسٹیج شو اور اسٹالس کے ذریعہ سا معین میں نیچر کے تئیں بیداری پیدا کرینگے۔ اس موضوع پر درجنوں سے زائد شو ایم ایس کے طلباء اپنی ٹیچرس کی نگرانی میں تیار کیا ہے جسکو اس سالانہ پروگرام میں عوام کے سامنے پیش کرینگے اور اپنے شو کے ذریعہ سماج میں نیچر کے تئیں شعور پیدا کرنے کا پیغام پہنچائینگے۔

انہوں نے بتایا کہ اس چار روزہ پروگرام میں ایم ایس کے طلباء نیچر کے تھیم پر مختلف ایکٹیویٹی شو اور اسٹیج شو پیش کرینگے۔اسکے علاوہ اس اخلاق فیسٹ میں تھیم پر مبنی درجنوں اسٹالس بھی سجائے گئے ہیں اور مائینڈ میپ کے ذریعہ ایم ایس کے مختلف انیشیٹو اور کانسپٹ سے عوام کو روشناس کر یا جا رہاہے ۔

واضح رہے کہ ایم ایس کریٹیو اسکولس ہر برس اپنا سالانہ پروگرام اخلاق شو کے طور پر منعقد کرتا ہے اور مختلف عنوان کے تحت یہ اخلاق فیسٹ منعقد کیا جاتا ہے۔ جسکا مقصد طلباء کے ساتھ ساتھ سماج کے دیگر افراد میں شعور بیدار کیا جاسکے۔ اخلاق شو ایم ایس کے تعلیمی نصاب کا حصہ ہے۔جسکے ذریعہ طلباء میں زندگی کے مختلف شعبے سے واقف کرانا ہوتا ہے اور ان میں ذمہ دار شہری کا احساس دلانا ہوتاہے۔

امسال کے اخلاق شو کی تھیم کے ذریعہ عوام الناس میں گلوبل وارمنگ، درختوں کا تحفظ، پانی اور بجلی کی بربادی کو روکنا وغیرہ شامل ہے۔ اسکے علاوہ پلاسٹک کے استعمال سے ماحولیات میں ہورہے نقصانات اور خطرے سے بھی بیداری پیدا کرنے کے لئے ننھے منھے بچیوں نے مختلف اسٹیج شو کے ذریعہ سماج میں پیغام پہنچانے کی سعی کی ہے۔طلباء نعت و حمد اور قرآن کی قرات بھی اس اخلاق فیسٹ میں خوش آواز میں پیش کیا ہے۔

چار دن چلنے والے اس اخلاق فسٹ کے آخری دن خواتین کے لئے مختص کیا گیا ہے۔جن میں مردوں کا داخلہ ممنوع ہے۔

Tags:

You Might also Like