Type to search

ٹی وی اور فلم

می ٹو معاملہ میں آیا مشہور ڈائریکٹر کا نام، بنگالی اداکارہ نے لگایا یہ الزام

فلمی ڈسک،12جنوری(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) می ٹو کی لہر اب بنگالی فلم انڈسٹری میں اپنا اثر دیکھانے لگا ہے۔ مقبول ٹیلی ویژن اداکارہ روپنجنانہ مترا Rupanjana Mitra نے مبینہ طور پر مشہور بنگالی فلم میکر ارندم سل Arindam sil کے خلاف جنسی ہراسانی کرنے کا چونکانے والا الزام لگایا ہے۔ آنندبازار ڈیجیٹل کو دیئے گئے انٹرویو میں اداکارہ نے خلاصہ کیا کہ کس طرح مقبول سیریل بھومیکنیا کے اسکرپٹ پڑھنے کے لیے اپنے کولکتہ آفس میں بلانے کے بعد فلم میکر نے انکے ساتھ برا سلوک کیا۔

روپنجانہ مترا نے بتایا، انہوں نے مجھے اپنے آفس بھومیکنیا کی پہلی قسط کی اسکرپٹ پڑھنے کے لیے بلایا۔ یہ واقع درگا پوجا کے کچھ دن پہلے کا ہے۔ حیرت کی بات یہ ہے کہ جب شام کو پانچ بجے میں انکے آفس پہنچی تب وہاں کوئی نہیں تھا۔ مجھے بہت ڈراونا لگا۔ اچانک سے وہ اپنے سیٹ سے اٹھ گئے اور میرے سر پر پیٹھ پر ہاتھ پھیرانا شروع کردیا۔ آفس میں بس وہ اور میں تھے۔ مجھے ڈر لگ رہا تھا کہ شاید میں سے اس بدتمیزی سےنہیں بچ پاؤنگی اور میں دعا کرنے لگی کہ کوئی وہاں آجائے۔

روپنجنا مترا نے آگے کہا، تھوڑی دیر بعد میں اسے نہیں برداشت کرسکی اور میں نے سختی سے ان سے اسکرپٹ کے بارے میں بات کرنے کے لیے کہا، وہ شاید سمجھ گئے تھے کہ میں اس طرح کی عورت نہیں تھی، جو انکو بڑھاوا دے، وہ اچانک سے ڈائریکٹر موڈ میں آئے اور مجھے اسکرپٹ سمجھانا شروع کیا اور پانچ منٹ کے اندر انکی بیوی بھی آفس میں آگئی۔ روپنجانہ نے یہ شیئر کیا کہ وہ انکے آفس سے آنے کے بعد کافی ٹوٹ گئی تھی۔

وہیں ارندم سل نے ان الزامات کو جھوٹ بتاتے ہوئے کہا، یہ کوئی سیاسی اسٹنٹ ہوسکتا ہے۔ مجھے نہیں پتہ کہ وہ یہ سب کیوں کہہ رہی ہے۔ ہم پرانے دوست ہے۔ وہ جس دن کی بات کررہی ہے اسی دن آفس سے نکلنے کے بعد انہوں نے مجھے میسج کیا تھا وہ کافی پرجوش ہے۔ میرے پاس آج بھی وہ میسج ہے، میں دیکھا بھی سکتا ہوں، اگر کوئی انکے ساتھ غلط سلوک کرئے گا تو اس انسان کو وہ میسج کیوں کریں گی؟