Type to search

صحت

پیریڈس میں کیا ہے معمول اور کیا ہے غیر معمول؟

period

ہیلتھ ڈسک،(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ماہواری عام طور پر خواتین کی زندگی کا ایک عام عمل ہے۔ پیریڈ صرف ری۔پروڈکشن کے لیے ہی ضروری نہیں ہوتا بلکہ یہ صحت کے بارے بھی بتاتا ہے۔ کیا آپ کو معلوم ہے کہ آپ کا پیریڈ کب ہوا اور کتنے دنوں تک رہا؟ اگر نہیں تو آپ کو ابھی سے اپنے پیریڈ پر نظر رکھنی چاہیئے۔

پیریڈس کی تاریخ کو ٹریک کرنے سے یہ سمجھنے میں مدد ملتی ہے کہ آپ کے لیے کیا عام ہے۔ اسکے ساتھ ہی بیضوی وقت اور ضروری بدلاؤ کو بھی سمجھنے میں مدد ملتی ہے۔ اگر آپ کا پیریڈ بے قاعدہ ہے تو یہ کسی صحت کا مسئلہ کا اشارہ ہوسکتا ہے۔ اس لیے ہر خاتون کو اپنے پیریڈ کو سمجھنا بے حد ضروری ہے۔

 

عام حیض کسے کہتے ہیں؟

عام طور پر ہر 21 سے 35 دنوں بعد خواتین کو پیریڈ ہوتا ہے جو 2 سے 7 دن تک رہتا ہے۔ اسے عام پیریڈ کہا جاتا ہے۔ شروعات کے کچھ سالوں تک حیض (ماہواری) کا سلسلہ لمبا ہوتا ہے لیکن عمر بڑھنے پر چھوٹی اور باقاعدہ ہوجاتا ہے۔ اس دوران ہلکی یا تیز بلڈنگ کے ساتھ درد ہوتا ہے۔ جو عام طور پر عام مانا جاتا ہے۔

پیریڈ کیا ہے؟
ہر مہینے خواتین کے انڈاشی سے ایک انڈا نکلتا ہے۔ اس عمل کو بیضوی کہتے ہیں۔ اس دوران خواتین کے جسم میں ہارمونل بدلاؤ ہوتا ہے اور یوٹیرن حمل (پریگننسی) کے لیے تیار ہوتا ہے۔ بیضوی کے وقت جب انڈا فرٹیلائز نہیں ہوتا ہے بچہ دانی کی پرت وجائنا یعنی اندام نہانی سے باہر نکلنے لگتی ہے۔ اسے پیریڈ یا ماہواری کہتے ہیں۔

 

حیض بے قاعدگی ہونے کی وجہ
عام طور پر کئی وجہوں سے پیریڈ بے قاعدہ ہوتا ہے۔ دودھ پلانے، ذیادہ وزن کم کرنے یا ذیادہ ورزش کرنے، کھانے کی خراب عادتیں، پولیسیسٹک انڈاشی سنڈروم، شرونیی سوزش (پیلوک انفلیمیٹری) کی بیماری اور یوٹیرن فائبرائڈ کی وجہ ماہواری بے قاعدہ ہوتا ہے۔

 

ماہواری کو کیسے ٹریک کریں؟
پیریڈ کو ٹریک کرنے کے لیے ہر مہینے یہ دیکھیں کہ آپ کا پیریڈ معمول سے سے کتنے دن ذیادہ یا کم رہتا ہے۔ اسکے ساتھ ہی ہلکی یا تیز بلڈنگ اور سینیٹری نیپکن کی تعداد پر بھی توجہ دینا چاہیئے۔ ماہواری کے دوران درد، موڈ اور سلوک میں بدلاؤ کے ساتھ ہی اندام نہانی سے خون کے تھکے نکلنے پر بھی خصوصی توجہ دینا چاہیئے۔


(نوٹ: صلاح سمیت یہ مضمون صرف عام معلومات فراہم کرتی ہے۔ یہ کسی بھی طرح سے طبی رائے کا متبادل نہیں ہے، مزید معلومات کے لئے ہمیشہ کسی ماہر یا اپنے ڈاکٹر سے رجوع کریں۔ اردو پوسٹ اس معلومات کے لیے ذمہ داری قبول نہیں کرتا ہے۔ )

Tags:

You Might also Like