Type to search

اسپورٹس

مینتی لینگر نے بتائی اپنے جدوجہد کی کہانی، کیسے چار بار آئی پی ایل کے لیے کیا گیا تھا مسترد

اسپورٹس ڈسک،25فروری(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) مایانتی لینگر—- یہ ایک ایسا نام ہے جسے کسی تعارف کی ضرورت نہیں ہے- ماینتی لینگر ہندوستان ہی نہیں بلکہ دنیا کی سب سے مشہور اسپورٹس اینکرس میں سے ایک ہے- مینتی لینگر اکثر ہندوستان کے میچوں سے پہلے اسپورٹس شو ہوسٹ کرتی دیکتھی تھی- مایانتی خوبصورت ہونے کے ساتھ ساتھ کھیل کی اچھی سمجھ بھی رکھتی ہے- یہی وجہ ہے کہ کامیابی انکے قدم چوم رہی ہے- حالانکہ ایک وقت ایسا بھی تھا جب انہیں ناکامیوں کا سامنا کرنا پڑا- آئی پی ایل میں وہ 4 بار اینکرینگ کے لیے منتخب نہیں کیا گیا- اسکا خلاصہ خود مینتی لینگر نے ایک انٹرویو میں کیا-

مینتی لینگر نے وریو میگزین کے ساتھ خاص بات چیت میں بتایا کہ انہیں آئی پی ایل میں چار بار ریجکٹ کیا گیا، اسکی وجہ سے انکا چہرہ تھا- مینتی لینگر نے کہا، مجھے چار بار آئی پی ایل سے مسترد کیا گیا، آئی پی ایل 2011 سے پہلے مجھے کہا گیا کہ آپ ہی ہمارا شو ہوسٹ کریں گی- لیکن اسکے بعد انہوں نے مجھے دوبارہ فون کرکےکہا کہ ابھی اپنے ورلڈ کپ ہوسٹ کیا ہے اور یہ آپ نہیں کرسکتی ہمیں نیا چہرہ چاہیئے-

مینتی لینگر نے کہا کہ وہ آئی پی ایل سے مسترد ہونے کے بعد ہار مان چکی تھی- انہوں نے کہا ، اس وقت میں نے ہار مان لی تھی- ایسا نہیں تھا کہ آپ اچھے نہیں ہے لیکن میں یہ جانتی تھی کہ وہ کیا تلاش کررہے تھے- زندگی میں کہی بھی مسترد ہونا کافی تکلیف دیتا ہے اور پرسکون رہنا مشکل ہوتا ہے- حالانکہ میں نے خود کو پرسکون کیا اور سوچا کہ آئی پی ایل میری قسمت میں نہیں ہے-

مینتی لینگر نے بھلے ہی ہار مان لی تھی لیکن سال 2018 میں آئی پی ایل کی براڈ کاسٹنگ اسٹار اسپورٹس کے ہاتھ لگی اور ایسے میں مایانتی کو آئی پی ایل کور کرنے کا موقع مل گیا، مینتی لینگر نے کہا میں سوچ رہی تھی کہ نہ جانے مجھے کتنے میچوں میں جانے کا موقع ملے گا، اسکے بعد مجھے موقع ملا اور میں گئی، ایک وقت میں نے خود سے کہا تھا کہ چپ چاپ کام کریں، کیونکہ اسکے لیے تم نے بہت انتظار کیا ہے اور آخر کار تم آئی پی ایل کو ہوسٹ کررہی ہوں-