Type to search

ٹی وی اور فلم

منداکنی برتھ ڈے اسپیشل: 16 سال کی عمر میں سپر ہٹ فلم دینے والی اداکارہ

منداکنی

فلمی ڈسک،30جولائی (اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) جب بھی فلم ‘رام تیری گنگا ملی’ کی بات ہوتی ہے۔ اس کی ہیروئن منداکنی کی تصویر ذہن میں ابھرنے لگتی ہے۔

آج منداکنی اپنی برتھ ڈے منا رہی ہے۔ انکی پیدائش 30 جولائی 1963 کو یو پی کے میرٹھ میں اینگلو انڈین خاندان میں ہوئی تھی۔ منداکنی کا اصلی نام یاسمین جوزف ہے۔ ان کے والد جوزف برطانوی نژاد تھے اور ماں مسلمان تھیں

منداکنی نے 1985 میں فلم میرا ساتھی سے بالی ووڈ میں بھی قدم رکھا حالانکہ یہ فلم باکس آفس پر بری طرح ناکام رہی۔ اسی سال منداکنی کی فلم رام تیری گنگا ریلیز ہوئی۔ یاسمین فلم میں بولڈ سین کرتی ہوئی نظر آئی تھی۔ حالانکہ اس فلم میں راج کپور نے پہلے سنجنا کپور کو لانچ کرنے کا پلان کیا تھا۔ بعد میں یہ رول میرٹھ کی رہنے والی یاسمین جوزف کے ہاتھ آیا۔

فلم میں جھرنے کے نیچے سفید ساڑی پہن کر منداکنی کے بھیگنے والے سین بے حد مقبول ہوئے تھے۔ جو آج بھی کئی لوگوں کو یاد ہوگا۔ 22سال کی اداکارہ نے پردے پر بولڈ سین کرکے سب کو حیران کردیا تھا۔ فلم کو کئی لوگوں نے فحش تک کہا لیکن اس فلم کے لیے انہیں فلم فیئر ایوارڈس میں بہترین اداکارہ کی نامزدگی ملی تھی۔ اس فلم کے بعد منداکنی نے بالی ووڈ میں اپنی ایک خاص شناخت قائم کی۔

رام تیری گنگا میلی کے بعد انہوں نے جال، لوہا، ڈانس ڈانس

، جیتے ہیں شان سے، کمانڈو، تیزاب اور جانباز جیسی کئی فلموں میں کام کیا۔

انہوں نے اپنے کیئریر کی شروعات 1985 میں ریلیز بنگلہ فلم انتاریر بھالوباشا سے کی تھی۔

انہوں نے 1996 میں فلم زور دار میں آخری بار کام کیا۔

اس دوران اداکارہ کا نام انڈر ورلڈ ڈان داؤد ابراہیم کے ساتھ لیا جانے لگا۔

کرکٹ کے میدان میں انہیں کئی مرتبہ داؤد ابراہیم کے ساتھ دیکھا گیا۔

انہوں ان دنوں فلم انڈسٹری میں سرگرم نہیں ہیں۔

وہ آج کل تبتی یوگا کلاسیز چلاتی ہیں اور دلائی لامہ کی فالوور ہیں۔

نیلی آنکھوں والی خوبصورت اداکارہ نے تیزی سے آسمان کی اونچائیاں تو چھوئی،

لیکن اچانک وہ پردے سے کہاں غائب ہوگئی، کسی کو خبر تک نہیں لگی۔

منداکنی نے تیزاب اور لوہا جیسی فلموں میں بھی اداکاری کی،

لیکن جو رول انہیں رام تیری گنگا میلی میں ملا تھا،

ویسا رول منداکنی کو دوبارہ نہیں مل سکا۔

Tags:

You Might also Like