Type to search

قومی

یہاں بن رہا ہے ملک کا سب سے بڑا ڈیٹینشن سنٹر

آسام،25ڈسمبر (اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) آسام میں ملک کا سب سے بڑا ڈیٹیشن سنٹر تیار کیا جارہا ہے۔ آسام کے گوالپارہ ضلع میں بنائے جارہے ڈیٹیشن سنٹر کیمپ میں غیر قانونی تارکین کو قید کیا جائے گا۔ بتادیں کہ آسام میں نیشنل سیٹیزن رجسٹر (این آر سی) تیار کرلیا گیا ہے۔ نیشنل سیٹیزن رجسٹر میں جن لوگوں کے نام نہیں آئے ہیں اور اگر انہیں غیرملکی ٹریبونل سے بھی راحت نہیں ملتی ہے تو انہیں ڈیٹینشن سنٹر میں رکھا جائے گا۔ اگر کوئی شخص ملک میں غیر قانونی داخل ہوتا ہے تب بھی اسے ڈیٹیشن سنٹر میں رکھا جاسکتا ہے۔ آسام کو گوالپارا میں ڈیٹینشن سنٹر میں کافی مزدور لگاتار کام کررہے ہیں۔ یہاں چار۔ چار منزل کی 15 عمارتیں بنائی جارہی ہے۔

آسام میں بنائے گئے ڈیٹیشن سنٹر

اس ڈیٹینشن سنٹر کا 65 فیصدی حصہ پورا ہوچکا ہے۔ اسے بنانے میں 46 کروڑ روپے خرچ کیے جارہے ہیں۔ اس سنٹر میں کل 3 ہزار غیر قانونی تارکین کو رکھنے کی سہولت ہوگی۔ گوالپارہ میں ڈیٹینشن سنٹر (حراستی مرکز) کی تعمیر دسمبر 2018 میں شروع ہوئی تھی۔ تعمیراتی کام شیڈول سے پیچھے چل رہا ہے۔ اس سنٹر میں 13 عمارتیں مردوں کے لیے ہوگی جبکہ 2 خواتین کے لئے۔ بتادیں کہ فی الحال آسام کے چھ ضلعوں میں ہی ڈیٹیشن سنٹر چل رہے ہیں۔ یہ ضلع ڈیبروگڑھ، سلچر، تیج پور، جوراہٹ، کوکرجھار اور گوالپاراہ میں واقع ہے۔ ان میں قریب 800 لوگ رہ رہے ہیں۔

ڈیٹیشن سنٹر کا پورا عمل سپریم کورٹ کی ہدایت پر عمل میں لائی گئی۔ اسکے تحت ہندوستانی زمین پر غیر ملکیوں کے طور پر پہچانے گئے لوگوں کو ساری بنیادی سہولیات فراہم کرنے کے انتظامات کیے گئے ہیں۔

Tags:

You Might also Like