Type to search

فیشن

تین سال پہلے موٹا بتا کر منگیتر نے توڑ دیا تھا رشتہ، اب خاتون نے جیتا مس گریٹ برطانیہ کا خطاب

فیشن ڈسک،28فروری(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) مس گریٹ برطانیہ کا خطاب جتنے والی جین اٹکن سے اسکے منگیتر نے اس وجہ سے رشتہ توڑ دیا تھا کیونکہ وہ بہت ذیادہ باہر کا کھانا کھاتی تھی اور بہت موٹی تھی۔ تین سال پہلے اپنے منگیتر کے ساتھ رشتہ ختم ہونے کے بعد جین نے وزن کم کرنے کی ٹھان لی اور اب وہ مس گریٹ برطانیہ ہے۔ ڈیلی میل کی ایک رپورٹ کے مطابق 26 سال کی جین انگلینڈ کے السیبی میں رہتی ہے۔

تین سال پہلے اپنے منگیتر سے بریک اپ کے بعد جین نے وزن کم کرنے کا فیصلہ کیا اور اسکے لیے انہوں نے صحت مند غذا کے ساتھ جم جانا بھی شروع کیا۔ دو سال کے بعد انہوں نے بیوٹی مقابلے میں حصہ لینا شروع کیا۔ سب سے پہلے انہوں نے مس سکنٹورپ کا خطاب جیتا۔ اسکے بعد جین نے مس انگلینڈ 2018 میں حصہ لیا اور اس میں فرسٹ رنر اپ رہی۔ اسکے انہوں نے بیوٹی مقابلے سے کچھ وقت کے لیے بریک لینا کا سوچا تھا لیکن بعد میں انہوں نے 75ویں مس گریٹ برطانیہ میں بھی حصہ لیا۔

پچھلے ہفتے انگلینڈ کے لسٹر میں اسکا فائنل منعقد کیا گیا تھا۔ جہاں جین نے مس گریٹ برطانیہ کا خطاب اپنے نام کیا۔ یہ خطاب جتنے کے بعد، جین نے ڈیلی میل سے بات کرتے ہوئے کہا، میں اپنی جیت کو لیکر ابھی بھی حیران ہوں، میرے پاس اپنی خوشی بیاں کرنے کے لیے الفاظ نہیں ہے۔ میں سچ بولو تو مجھے ابھی تک یقین نہیں ہورہا ہے۔ تین سال پہلے میں مس گریٹ برطانیہ جتنے کا سوچ بھی نہیں سکتی تھی۔ اپنی بات ختم کرتے ہوئے جین نے کہا، محنت کا پھل ضرور ملتا ہے۔

جین نے کہا مس گریٹ برطانیہ کے ساتھ ہی میرا لمبا اور مشکل سفر ختم ہو گیا ہے۔ حالانکہ میرا جسم ضرور بدل گیا ہے لیکن میری پرسنالٹی ابھی بھی ویسی ہی ہے اور شاید اس وجہ سے میں جیت پائی ہوں۔ انہوں نے کہا، جج نے ضرور میری پرسنالٹی پر مجھے یہ خطاب دیا ہے۔

جین نے اپنے بریک اپ سے پہلے وہ کیسی تھی اس بارے میں بھی بتایا، انہوں نے کہا، میں اس وقت کافی ذیادہ پاستا اور پیزا کھایا کری تھی اور اسکے بعد میں اکیلے ہی فیملی سائز چاکلیٹ بھی کھا لیا کرتی تھی۔ ویکینڈس پر ہم اکثر صوفے پر بیٹھ کر ایک ساتھ کھانا کھایا کرتے تھے۔ لیکن جس دن مجھے اس نے چھوڑا تو مجھے لگا کہ میری دنیا ختم ہوگئی۔ میں کئی ہفتے تک روئی لیکن میرے ساتھ اس وقت جو ہوا وہ بہت اچھا ہوائ میں نے اسکے بعد خود پر کام کرنا شروع کیا اور کبھی پچھے موڑ کر نہیں دیکھا۔