Type to search

قومی

اس سال ہندوستانی سفر حج پر نہیں جائیں گے: مختار عباس نقوی

Indians will not go to Hajj this year says Mukhtar Abbas Naqvi

دہلی،23جون(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) سعودی عرب کی طرف سے غیر ملکی مسلمانوں کے لیے سفر حج منسوخ کیے جانے کے بعد ہندوستانی حکومت سبھی حج درخواستوں کے پیسے واپس کرے گی- مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے کہا، ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ حج 2020 کے لیے ہندوستان کے حج سفر اس بار سعودی عرب نہیں جائیں گے- اسکے لیے قریب 2 لاکھ  سے بھی ذیادہ لوگوں کی طرف سے جمع کرائے گئے درخواست فیس کو حکومت واپس کرئے گی- اس میں کوئی چارج نہیں لیا جائے گا-

 

مسٹر مختار عباس نقوی نے یہاں صحافیوں سے کہا ’’کل رات سعودی عرب حکومت میں حج کے وزیر ڈاکٹر محمد صالح بن طاہر کا فون آیا تھا ۔ انہوں نے پوری دنیا میں کورونا وبا کے تعلق سے تبادلہ خیال کیا۔ انہوں حج 2020 کے لئے اس بار ہندوستانیوں کو سفر حج پر نہ بھیجنے کا مشورہ دیا‘‘۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے سعودی عرب کے فیصلے کا احترام کرتے ہوئے فیصلہ کیا ہے کہ اس بار ہندوستانی عازمین کو سفر حج پر نہیں بھیجا جائے گا۔

صرف سعودی عرب کے رہائشی ہی کرسکیں گے حج

سعودی عرب نے کہا کہ اس سال حج کو منسوخ نہیں کیا جائے گا- لیکن کچھ پابندیوں کے ساتھ مقامی لوگوں کو ہی محدود تعداد میں اس میں شامل ہونے کی اجازت دی جائے گی- سعودی عرب سلطنت نے منگل کو کہا کہ وہ مختلف ملکوں کے صرف انہی لوگوں کو حج میں شامل ہونے کی اجازت دے گا جو پہلے سے ہی ملک میں رہ رہے ہیں- ملی معلومات کے مطابق حج سفر اس سال جولائی کے آخر میں شروع ہوگی-

 

کورنا بحران کی وجہ سے تین مہینے سے بند مقد شہر مکہ میں لوگوں کو صحت سے متعلق احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے کے ہدایت جاری کیے گئے ہیں- بتادیں کہ عام دنوں میں حج کے لیے سعودی عرب کے مکہ شہر میں عام طور پر دنیا بھر سے 20 لاکھ کے قریب مسلم آتے ہیں-