Type to search

صحت

یادداشت بڑھانے کے لیے دوا نہیں، ان چیزوں کا کریں استعمال

ہیلتھ ڈسک،(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) عام طور پر عمر بڑھنے کے ساتھ ہی انسان کی یادداشت بھی کمزور ہونے کی بات سننے کو ملتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ بوڑھوں کو کم یاد رکھنے یا کسی چیز کو بڑھانے میں مشکل ہوتی ہے۔

اگر آپ بھی کمزور یادداشت جیسے مسئلے سے متاثر ہیں تو آپ کچھ خاص چیزیں کو استعمال کرکے یادداشت سے جوڑے مسائل سے چھٹکارا پاسکتے ہیں۔

بادام

یادداشت بنائے رکھنے کے لیے اسے درست کرنے کے لیے ڈارائی فروٹس (خشک میوہ جات) طور پر بادام فائدے مند ماناجاتا ہے۔ بادام پروٹین ، مینگنیج، کاپر، اور رائبوفلاوین جیسے غذائی اجزاء ہوتتے ہیں۔ جو الزائمر  اور دیگر اعصابی بیماریوں سے نجات دلانے میں موثر کردار ادا کرتے ہیں۔ رات کو چار سے پانچ بادام پانی میں بھیگا کر صبح اٹھ کر انکا استعمال کرنے سے دماغ سے متعلق بیماریوں سے نجات مل سکتی ہے۔ یہی نہیں بادام کھانے سے دماغ تیز ہوتا ہے۔

پالک

یادداشت کو بنائے رکھنے اور اسے بڑھانے میں مفید کھانے کی اشیاء میں پالک سب سے اہم ہے۔ پالک ایک ایسا نسخہ ہے جسکا استعمال عام طور سے عام انسان کرککے اپنی دماغی کمزوری کو درست کرسکتا ہے۔ پالک میں فولٹ یا فولک ایسڈ ہوتے ہیں اور اسے وٹامن بی 9 کے نام سے جاناجاتا ہے۔  اسی وٹامن کی کمی کی وجہ سے دماغ سے متعلق انتشار پیدا ہونے لگتا ہے۔ اسکے علاوہ دماغ کے لیے ضروری اور فائدے مند اومیگا 3 فیٹی اسیڈ کی مقدار پالک میں ہوی ہے۔ اسکے استعمال سے آپ کی یادداشت ، دلیل کرنے کی طاقت اور حراستی کو توجہ بڑھاتی ہے۔

انڈا

یادداشت کو درست کرنے اور یادداشت طاقت کو بڑھانے میں انڈا بھی اہم رول ادا کرتا ہے۔ انڈے میں پائے جانے والا پیلا حصہ دماغ کے لیے بہ ہی فائدے مند ماناجاتا ہے۔ مچھلی کی طرح انڈے میں بھی وٹامن بی اور اومیگا 3 فیٹی ایسڈ پایا جاتا ہے۔ اسکے علاوہ انڈے میں لیسیٹن اور سیلینیم بھی ہوتا ہے۔ جو آپ کے دماغ کو درست کرنے کے ساتھ ساتھ اسکی کام کرنے کی گنجائش کو بھی بڑھانے میں مدد گار ہونگے۔

اخروٹ

سائنسی لحاظ سے اخروٹ دماع کے لیے کافی فائدے مند ہے اور یہ کھانے میں بھی دماغ جیسا ہی ہوتا ہے۔ اخروٹ میں اینٹی آکسیڈینٹ اور وٹامن ای بھرپور مقدار میں پایا جاتا ہے۔ اس میں تین درجن سے ذیادہ نیوران ٹرانسمیٹر کو بنانے میں مدد کرتا ہے۔ جو دماغی عمل کے لیے بہت ضروری ہوتے ہیں۔ اینٹی آکسیڈینٹ جسم میں موجود قدرتی کیمیکل کو ختم ہونے سے روک کر بیماری کی روک تھام کرتے ہیں۔ روزآنہ اخروٹ کے استعمال سے یادداشت بڑھتی ہے۔

مچھلی

یادداشت بنائے رکھنے کے لیے مچھلی کا استعمال کرنا بھی فائدے مند ہے۔ سبزی خور لوگوں کے لیے دماغ تیز کرنے میں مچھلی کا استعمال فائدے مند ہوگا۔ کیونکہ مچھلی میں اومیگا 3 فیٹی ایسڈ ہوتا ہے۔ مچھلی میں اومیگا 3 فیٹی ایسڈ ہونے کی وجہ سے اسے برین فوڈ بھی کہا جاتا ہے۔ مچھلی کا استعمال یادداشت اور توجہ مرکوز کرنے میں کافی فائدے مند ہوتی ہے۔

مچھلی

یادداشت بنائے رکھنے کے لیے مچھلی کا استعمال کرنا بھی فائدے مند ہے۔ سبزی خور لوگوں کے لیے دماغ تیز کرنے میں مچھلی کا استعمال فائدے مند ہوگا۔ کیونکہ مچھلی میں اومیگا 3 فیٹی ایسڈ ہوتا ہے۔ مچھلی میں اومیگا 3 فیٹی ایسڈ ہونے کی وجہ سے اسے برین فوڈ بھی کہا جاتا ہے۔ مچھلی کا استعمال یادداشت اور توجہ مرکوز کرنے میں کافی فائدے مند ہوتی ہے۔

جامن

یادداشت بنائے رکھنے اور اسے تیز کرنے میں جامن کا استعتمال کرسکتے ہیں۔ کیونکہ جامن میں کئی خوبیوں سے بھرا ہوتا ہے۔ جامن میں پائے جانے والی انتھوکیننس اور فسیٹیں جیسے فوٹو کیمیکل الزائمر جیسی مسائل کو دور کرنے میں فائدے مند ہوتی ہے۔ جامن کھانے سے آپ اپنی پچھلی باتوں کو یاد رکھ سکیں گے۔