Type to search

جرائم و حادثات

گاندھی ہاسپٹل میں پکڑ گیا منا بھائی ایم بی بی ایس ڈاکٹر، پہنچا جیل

حیدرآباد،8فروری(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) سکندرآباد میں واقع گاندھی ہاسپٹل میں چلکلگوڑہ پولیس نے فرضی ڈاکٹر کو حراست میں لے کر چرلاپلی جیل بھیج دیا۔ اس نے کلینک کھول رکھا ہے۔ اس کلینک میں اس نے طبی خدمات شروع کی۔ اس نے نبض کی جانچ اور سلائن لگانے میں تربیت لی۔ فرضی سریٹیفکیٹ سے وہ کلینک چلا رہا تھا۔

بتایا جارہا ہے کہ سپرجیت پانڈا حیدرآباد کے اوپل علاقے کا رہنا والا ہے۔ اس نے مائیکروبایولوجیکل میں ایم ایس سی کی پڑھائی پوری کی۔ بنا کسی کڑی محنت کے وہ پیسہ کمانے چاہتا رہا تھا۔ وہ کلینک کھول کر مریضوں کی جانچ کررہا تھا۔

آپ کو بتادیں کہ گاندھی ہاسپٹل میں وہ ڈاکٹروں اور میڈیکل طالب علموں کو جھانسہ دیتا رہا۔ اس نے ڈبلیو ایچ او کا فرضی پہنچان کارڈ بنا رکھا تھا۔ وہ کینٹین میں پی جی کے طلبا کے ساتھ بحث کرتے ہوئے طبی خدمات کی معلومات حاصل کررہا تھا۔ اس درمیان پی جی کے طلبا کو اس کے کچھ سوالوں پر شک ہوا اور انہوں نے سینئر حکام کو معلومات دی۔ پولیس نے فرضی ڈاکٹر کو تلنگانہ میڈیکل پریکٹیشنرز رجسٹریشن ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرکے گرفتار کیا۔