Type to search

صحت

موٹاپا: گھریلو نسخوں سے موٹاپا کیسے کنٹرول کریں

Easy Home weight-Loss

ہیلتھ ڈسک،(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) اکثر انسان اپنی صحت کو لیکر کافی فکر مند رہتا ہے۔ کہی وہ ذیادہ موٹا یا ذیادہ پتلا نہ ہوجائے اس کے لیے وہ طرح طرح کے کھانے اور مشروبات کااستعمال کرنے لگتا ہے۔ اور اپنی ڈائٹ کو لیکر کافی فکر میں ڈوبہ رہتا ہے۔ اکثر خواتین اپنے بڑھتے وزن کو کم کرنے کے لیے ورزش، ڈائٹ، ایروبکس، گھریلو نسخے جیسے عمل کرنے لگتی ہے۔ وہیں مرد حضرات بھی اپنے ذیادہ وزن کو لیکر خواتین کے برابر ورزش، ڈائٹ کو لیکر کافی فکر مند نظر آتے ہیں۔ اور انٹرنیٹ پر وزن کم کرنے کے طریقے ڈھونڈنے لگتے ہیں۔

اگر انسان کی موٹاپے کی وجہ کوئی میڈیکل کنڈیشن نہیں ہے تو انسان صرف اپنے لائف اسٹائل میں اہم اور چند بدلاؤ کرکے بہت ہی آسانی سے خود کو بدل سکتا ہے اور ایک نئے شیپ میں آسکتا ہے۔ چلیئے بات کرتے ہیں ان آسان طریقوں کے بارے میں جو ہماری روز مرہ کی زندگی سے جڑے ہیں اور بڑھتے وزن کی بڑی وجہ بن جاتے ہیں۔

رات کو مکمل نیند لیں

آج کے دور میں انسان دیر تک جاگتا ہے اور دن میں سوتا ہے۔ دیر رات تک جگانا اور صبح دیر تک سونا۔ یا پھر دیر رات تک جاگنا اور صرف 4 سے 5 گھنٹے کی نیند لینا اور اگالے دن اپنے کام میں مصروف ہوجانا۔ ساتھ ہی سونے اور جاگنے کا کوئی مقررہ وقت نہ ہوا۔ یہ کچھ چند چیزیں ہیں، جنکی وجہ سے ہماری نیند پوری نہیں ہوپاتی اور باڈی بولٹ کرنے لگتی ہے۔

یعنی ہماری ہڈیوں اور پٹھوں پر جو موٹاپا ہے، جسم اسے لوز چھوڑ دیتی ہے۔ جس وجہ سے ہم موٹے نہ ہوتے ہوئے بھی موٹے دیکھنے لگتے ہیں۔ اسکے ساتھ ہی ہماری اسکین کا چرم بھی لوز ہونے لگتا ہے۔ اسکے ساتھ ہی نیند پوری نہ ہونے کی وجہ سے ہماری کھانے کی عادت بہت ذیادہ متاثر ہوتی ہے۔

ہمارے جسم کو بھوک نہیں لگ رہی ہوتی ہے لیکن ہمارا دماغ ہمیں اس طرح کے اشارے دینے لگتا ہے کہ ہر وقت بھوک لگی ہوتی ہے۔ اسکی وجہ ہوتا ہے نیند پوری نہ ہونے کی وجہ سے دماغ میں ریلیز ہونے والے لپٹن ہارمون۔ یہ وہ ہارومن ہے، جو ہمارے وزن کو کنٹرول کرنے میں بہت اہم رول ادا کرتے ہیں۔ یہ ایک میڈیکلی ٹیسٹیڈ فارمولہ ہے جو آپ کو وزن رکھنے میں بہت کام آئے گا۔

پانی پیتے رہنا

اکثر ہم پانی پینے میں دیر کرتے ہیں یا بھول جاتے ہیں۔ پانی اگر صحیح طریقے سے پیا جائے تو نہ صرف آپ کے جسم کو فیٹ ہونے سے بچاتا ہے بلکہ بی پی کنٹرول رکھتا ہے اور اسکین کو چمکدار بنائے رکھتا ہے۔ اپنے جسم کو ہائیڈریڈ رکھنا فیٹنس کا ایک زبردست ذریعہ ہے۔

ماہرین کہتے ہیں کہ ہر شخص کو ایک دن میں کم سے کم تین لیٹر پانی ضرور پینا چاہیئے۔ ایسا کرنا آپکی فیزیکل فیٹنس کو ہی نہیں بلکہ منٹل فیٹنس کو بھی بنائے رکھتا ہے۔

اس سے ہمارے ہاضمے کا عمل صحیح رہتا ہے۔ میٹا بولزم ہائی ہوتا ہے ساتتھ ہی ہم جو بھی کھانا کھاتے ہیں وہ ہمارے جسم کو پورا فائدے دیتا ہے۔ اب آپ کو لگ سکتا ہے کہ کھانے کا فائدہ پانی سے کیسے ملے گا۔۔۔ تو جواب ہے میٹا بولزم ۔ یہی تو ہمارے جسم کو پرورش کرنے کا کام کرتا ہے۔

پروٹین کا استعمال بڑھائیں

آج کے دور میں انسان جنک فوڈ پر ذیادہ توجہ دے رہا ہے۔ کیوں کہ یہ جلد بن جاتے ہیں۔ آئیل اور چکنائی بھرپور ہوتے ہیں۔ کھانے میں مزیدار ہوتے ہیں۔ اس لیے ہم اسکی عادی ہوگئے ہیں اور اچھی غذا سے کھانے سے دور ہوگئے ہیں۔ پروٹین سے بھرپور چیزیں جیسے دالیں اور اناج کھانے سے ہمارے جسم کو پروٹین کی بھرپور مقدار ملتی ہے۔ پروٹین جسم کے لیے ضروری ایک ایسا عنصر ہے، جو ہماری بھوک کو کنٹرول کرنے کا کام کرتا ہے۔ اگر آپ کو لگتا ہے کہ آپ کو بھوک ذیادہ لگتی ہے تو اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کرنے کے ساتھ ہی آپ کو پروٹین ڈائٹ بڑھا دینا چاہیئے۔

یہاں ہم پروٹین مشروب کی بات بالکل نہیں کررہے ہیں، پروٹین ڈائٹ لینے سے پیٹ ذیادہ دیر تک بھرا ہوا رہتا ہے۔ اور ہمیں بھوک کم لگتی ہے۔ کیونکہ پروٹین ہمارے جسم میں بھوک بڑھانے سے متعلق ہارمون گھورلن کے پروڈکشن کو کم کردیتا ہے۔ پروٹین ڈائٹ میں آپ انڈا، سویا بین اور پروٹین سے بھری جیسی چیزیں لے سکتے ہیں۔

Tags:

You Might also Like