Type to search

صحت

اے سی کی ہوا کیسے پہنچا سکتی ہے آپ کو نقصان

اے سی کی ہوا

ویب ڈسک(اردو پوسٹ) گرمیوں میں موسم میں اے سی والے کمرے میں بیٹھنا سبھی کو پسند آتا ہے۔ گرمیوں میں اے سی کے بنا رہنا مشکل سا لگتا ہے۔ اے سی کی ہوا ہمیں نقصان پہنچا سکتی ہے۔ اور ہر وقت اسکی ضرورت محسوس ہوتی ہے۔

کئی لوگ تو بنا اے سی کے گرمیاں بتانے کی سونچ بھی نہیں پاتے۔ کئی آفسوں میں تو اتنا تیز اے سی چل رہا ہوتا ہے کہ وہاں ہر موسم میں شال یا سوئٹر پہننا پڑتا ہے۔

نو۔ دس گھنٹے اتنی تیز اے سی میں بیٹھنے سے کئی بار ہماری طبعیت بھی بگڑ جاتی ہے۔ کیا آپ جانتے ہیں کہ اے سی سے ہمیں کئی نقصان بھی ہو سکتے ہیں اور اس سے ہمیں صحت سے جوڑے مسائل ہوسکتے ہیں۔

ہمیشہ اے سی میں رہنے والوں کو یہ جاننے کی ضرورت ہے کہ اے سی کے استعمال سے انہیں کئی مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

رات کو ایئرکنڈیشن میں سونے کے دوران کمرے میں درجہ حرارت کئی بار بہت کم ہوجاتا ہے۔ خاص کر جب صبح کے چار یا پانچ بج رہے ہو۔ یہ وہ وقت ہوتا ہے جب ہم بہت گہری نیند میں ہوتے ہیں۔

اور ہمیں اس کا احساس نہیں ہوتا اور نہ ہی ہم اے سی بند کرنے کے لیے اٹھ سکتے ہیں۔ اے سی میں ہمیں اندازہ بھی نہیں ہوتا اور جسم کافی ٹھنڈا ہوجاتا ہے۔ اے سی کی ایسی ٹھنڈ کی وجہ سے جسم میں ہڈیوں سے جوڑے مسائل شروع ہوتے ہیں جو آگے چل کر بیماری میں بدل جاتے ہے۔

ایئرکنڈیشن والے کمرے کے کھڑکی ۔دروازے ہمیشہ بند رہتے ہیں۔ اس وجہ سے کمرے کی ہوا اتنے ہی دائرے میں بند ہوجاتی ہے اور باہر سے تازہ ہوا بھی کمرے میں نہیں آتی۔ چوبیں گھنٹے اے سی میں رہنے سے ہمارے جسم کو تازہ ہوا نہیں مل پاتی ہے۔ تازہ ہوا کی کمی جسم کی نشوونما میں روکاوٹ کا کام کرتی ہے۔

اے سی کی ٹھنڈک سے ہمارے جسم کا پسینہ سوکھ جاتا ہے اور ایئرکنڈیشن جسم کی نمی بھی کھینچ لیتا ہے۔ نمی کے کم ہونے سے ہمارے جسم میں پانی کی کمی ہونے لگتی ہے۔ اس سے اسکین پر جھریاں دیکھنے لگتی ہے۔ جسم میں پانی کی کمی سے کئی طرح کی بیماریاں تیزی سے جسم پر حاوی ہونے لگتی ہے

Tags: