Type to search

قومی

کانگریس کے رہنما موتی لال وورا کا 93 سال کی عمر میں انتقال

موتی لال وورا

نئی دہلی، 21 ڈسمبر (ذرائع) کانگریس کے تجربہ کار لیڈر موتی لال وورا کا پیر (21 ڈسمبر 2020) کو 93 سال کی عمر میں انتقال ہوگیا۔ مسٹر وورا نے دہلی کے فورٹس اسپتال میں آخری سانس لی۔ موتی لال وورا مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی رہ چکے ہیں۔

وہ 26 مئی 1993 سے 3 مئی 1966 تک اترپردیش کے گورنر بھی رہے۔ موتی لال وورا 20 دسمبر 1928 کو راجستھان کے ناگور ضلع میں پیدا ہوئے تھے۔ وہ دو با ر غیرمنقسم مدھیہ پردیش کے وزیراعلی، اترپردیش کے گورنر اور کئی بار مرکزی وزیر کے عہدہ پر رہے۔

انہوں نے رائے پور اور کولکتہ سے اپنی تعلیم مکمل کرنے کے بعد کئی اخبارات میں بھی کام کیا۔

ایک دن پہلے ہی انہوں نے اپنی سالگرہ منائی تھی۔ کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے موتی لال وورا کی موت پر افسوس ظاہر کیا۔ انہوں نے کہا کہ وورا جی کانگریس کے سچے لیڈر اور ایک عظیم شخص تھے، ان کی کمی کو ہمیشہ محسوس ہوگی۔

سیاست کے ابتدائی دنوں میں ہی وہ کانگریس رہنما کیشوری لال شکلا سے ملے اور پارٹی میں شامل ہوگئے۔ کانگریس کے ٹکٹ پر وہ 1972 کا اسمبلی انتخاب جیتا۔ سال 1977 اور سال 1980 میں بھی انہیں جیت ملی۔ ارجن سنگھ کی حکومت بنی تو موتی لال کو وزیر بنایا گیا۔

وزیراعظم نریندر مودی نے بھی اظہار تعزیت کیا۔ پی ایم او سے جاری ٹیوٹ کے مطابق، انہوں نے تعزیتی پیغام میں کہا، وورا جی کانگریس کے سب سے سینئر قائدین میں سے ایک تھے۔

پرینکا گاندھی نے بھی ٹیوٹ کرکے تعزیت ظاہر کی۔ شری موتی لال وورا جی کی موت سے کانگریس پارٹی کے ہر ایک رہنما ، ہر ایک کارکن کو شخصی طور پر افسوس محسوس ہورہا ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *