Type to search

تلنگانہ

تلنگانہ: کے سی آر نے وائرس کو لیکر پی ایم سے کی اپیل

حیدرآباد،21مارچ(ارد پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ہندوستان میں کورونا وائرس کے معاملات بڑھتے ہی جارہے ہیں۔ ہفتہ کی صبح 22 نئے کیس سامنے آئے ہیں۔ متاثرہ لوگوں کی تعداد کا نمبر اب 258 پہنچ چکا ہے۔ چار لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔ ابھی تک 28 لوگ اس بیماری کو شکست دینے میں کامیاب رہے ہیں۔ شہریوں کی حفاظت کو لیکر پی ایم مودی نے سبھی ریاستوں کے وزیراعلی سے بات کررہے ہیں۔ تلنگانہ کے وزیراعلی کے چندر شیکھر راؤ نے پی ایم سے بات چیت کے دوران ان سے اپیل کی ہے کہ حکومت کوروناوائرس سے متعلق جانچ کے لیے حیدرآباد میں قائم سینٹر فار سیلولر اینڈ اینڈ مالیکیولر بیالوجی ( سی سی ایم بی) کا استعمال کرسکتی ہے۔ یہاں برے پیمانے پر تفتیش کی جانچ کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے پی ایم مودی کو بتایا کہ سی سی ایم بی ایک لائف سائنس ریسرچ سنٹر ہے اور یہ مرکز کے ماتحت آتا ہے۔

جمعہ کی شام ، وزیر اعظم مودی نے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے کورونا وائرس کے معاملے پر وزیر اعلی چندرشیکھر راؤ سے بات کی تھی۔ اس دوران کے سی آر نے پی ایم مودی سے کہا کہ اگر مرکزی حکومت موقع دیتی ہے تو ریاستی حکومت سی سی ایم بی کے ساتھ مل کر ایک ساتھ ایک ہی جگہ پر ہزاروں نمونوں کو ٹسٹ کرسکتی ہے۔ سی ایم نے پی ایم مودی کو یہ بھی بتایا کہ ریاستی حکومت کس طرح سے اس وائرس سے لڑ رہی ہے۔ ریاست میں احتیاط کے طور پر سبھی ممکن قدم اٹھائے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میٹرو شہر جیسے دہلی، کولکتہ، حیدرآباد ، بنگلور اور بیرون ملکوں سے آنے والے لوگوں کی تعداد ذیادہ ہوتی ہے اور ان شہروں میں واقع ایئرپورٹ پر سخت نگرانی کی جانی چاہیئے۔ انہوں نے مودی کو کئی دیگر تجاویز بھی دیئے۔

سی ایم چندر شیکھر راؤ نے مزید کہا کہ ملک میں ریل کے ذریعہ بھی کروڑوں لوگ سفر کرتے ہیں۔ لہذا سبھی ریلوے اسٹیشنوں پر کورونا وائرس کا ٹیسٹ کیا جانا چاہیئے۔ سبھی ریلوے کوچ اور اسٹیشنوں کو بھی سینٹائز کیا جائے۔ راؤ نے مودی کو بتایا کہ انفیکشن نہ پھیلے اسکے لیے انہوں نے ریاست میں سبھی عوامی میٹنگس پر پابندی لگا دی ہے۔ رام نومی ، شب معراج جیسے سبھی پروگرام کو رد کردیا گیا ہے۔ انہوں نے مودی کو بھروسہ دلایا کہ وائرس کو جڑ سے ختم کرنے کے لیے ریاستی حکومت مرکز کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لیے پوری طرح سے تیار ہے۔

Tags:

You Might also Like