Type to search

ٹی وی اور فلم

گنیش اچاریہ کی سالگرہ: بے حد غریبی میں گذرا تھا گنیش اچاریہ کا بچپن

فلمی ڈسک،14جون(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) بالی ووڈ کوریوگرافر گنیش اچاریہ 14 جون کو اپنا 49 واں برتھے ڈے منارہے ہیں۔ انہوں نے اپنے کیریئر کی شروعات سال 1992 میں آئی فلم انعام سے کی تھی۔ گنیش اچاریہ کے والد گوپی بھی ڈانس ماسٹر تھے۔

گنیش اچاریہ 10 سال کے تھے تو انکے والد کا انتقال ہوگیا تھا۔ والد کے مرنے کے بعد انکا بچپن بے حد غریبی میں گذرا تھا۔ گنیش اچاریہ کی پڑھائی لکھائی تک چھوٹ گئی تھی۔ چھوٹی سی عمر میں وہ اپنی بہن کے پاس چلے گئے تھے۔

 

View this post on Instagram

 

Family😇

A post shared by Ganesh Acharya (@ganeshacharyaa) on

گنیش اچاریہ نے پہلے اپنی بہن کملا اچاریہ سے ڈانس سیکھا۔ اسکے بعد وہ مشہور کوریوگرافر کملاجی کے اسسٹنٹ بنے۔ 12 سال کی عمر میں انہوں نے اپنا خود کا ڈانس گروپ بنا لیا تھا۔ 19سال کی عمر میں آتے آتے وہ کافی مقبول ہوگئے تھے۔

گنیش اچاریہ کا وزن ایک وقت میں 200 کلو تک ہوگیا تھا۔ حالانکہ سال 2017 میں انہوں نے 85کلو وزن کم کیا تھا۔ گنیش اچاریہ نے ایک انٹرویو کے دوران بتایا کہ وہ تین گھنٹے تک جم اور سوئمنگ کیا کرتے تھے۔ اسکے علاوہ انہوں نے ڈائٹ میں بھی کافی بدلاؤ کیا تھا۔

انہوں نے کہا میں رات 8 بجے کے بعد اور صبح 12 بجے سے پہلے کچھ بھی نہیں کھاتا تھا۔ جم کے بعد پھل ضرور کھاتا ہوں۔ وہیں رات میں گرین ٹی، بلیک ٹی جیسی لیکوڈ ڈائٹ ہی لیتا تھا۔

گنیش اچاریہ پچھلے کچھ وقت سے کافی تنازعات میں رہے۔ تنو شری دتہ نے فلم ہارن وکے کی شوٹنگ کے دوران ان پر ہرسانی کا الزام لگایا تھا۔ وہیں اس سال انکے خلاف ایک خاتون نے جنسی ہرسانی کی ایف آئی آر درج کرائی تھی۔
خاتون کوریوگرافر نے الزام لگایا تھا کہ گینش نے انہیں جبرا پورن دیکھایا تھا۔ اسکے علاوہ ایک سینئر بیک گراؤنڈ ڈانسر نے دعوی کیا کہ 90 کے دہائی میں گنیش اچاریہ نے انکےساتھ جنسی ہراسانی کی تھی۔