Type to search

قومی

کورونا وائرس کے چیلنج کے درمیان لوگوں کو ایک اور راحت پیکیج دینے کی تیاری میں حکومت : رپورٹ

corona mask

نئی دہلی،6اپریل (پریس ٹرسٹ آف انڈیا) کوروناوائرس کی شدید چیلنج کے درمیان ، مرکزی حکومت نے لاک ڈاؤن ختم ہونے کے بعد ممکنہ صورتحال پر غور کرنا شروع کردیا ہے۔ اس کے تحت کورونا وائرس کے اثرات کو کم کرنے کے لئے حکومت ایک اور راحت پیکیج پر غور کر رہی ہے تاکہ معیشت کی حالت میں سدھار کی سمت میں آگے بڑھا جاسکے۔ حالانکہ اس سمت میں ابھی کوئی آخری فیصلہ نہیں لیا گیا ہے۔ ایک سینئر عہدیدار نے اتوار کو یہ معلومات دی۔

ایک عہدیدار کے مطابق ،فی الحال ان مسائل پر توجہ دی جارہی ہے جو 15 اپریل کو لاک ڈاؤن کے ختم کیے جانے کے بعد سامنے آسکتے ہیں۔ ایک پیکیج پر غور کیا گیا ہے لیکن اس بارے میں ابھی کوئی حتمی فیصلہ نہیں لیا گیا ہے۔ اس منصوبے کے پیچھے خیال یہ ہے کہ کھپت کو ایک بار پھر تیز کرنا جائے ایس لیے اس سمت میں کچھ اقدامات کرنے کی ضرورت ہوگی۔ غور طلب ہے کہ ہندوستان میں کورونا وائرس کے انفیکشن کے شکار لوگوں کی تعاد بڑھ رہی ہے۔

اگر حکومت کی طرف سے کسی پیکیج کا اعلان ہوتا ہے تو کورونا وائرس کو اثر کو روکنے کی سمت میں یہ تیسرا اہم اقدام ہوگا۔ پی ایم نریندرمودی کے 24 مارچ کو لاک ڈاؤن کے اعلان کرنے سے کچھ گھنٹے پہلے ہی وزیر خزانہ نرملا سیتارامن نے ٹیکس دہندگان اور کاروباریوں اور کے لیے کچھ راحت اقدامات کا اعلان کیا تھا۔ اسکے دو دن بعد ہی غریبوں اور پسماندہ افراد کو سہارا دینے کے لیے وزیر خزانہ نے 1.7 لاکھ کروڑ روپے کے پی ایم غریب کلیان راحت پیکیج کا اعلان کیا۔

عہدیدار نے اتوار کو کہا کہ وہ کچھ فلاحی اور دیگر سرکاری منصوبوں کو لاک ڈاؤن بعد کی حالات کے مطابق بہتر بنانے کی امکانات پر غور کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کئی طرح کے آپشنس سامنے ہیں۔

Tags:

You Might also Like