Type to search

قومی

شہریت قانون کے مخالفت میں مظاہرین نے مغربی بنگال میں ایک ریلوے اسٹیشن کو نذر آتش کیا

بنگال،14ڈسمبر(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) مغربی بنگال کے مرشید آباد ضلع میں ایک ریلوئے احاطہ میں جمعہ کی شام کو ہزاروں لوگوں نے شہریت قانون کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔ اس دوران مظاہرین نے بیلڈنگا ریلوے اسٹیشن کے احاطے میں تعینات آر پی ایف اہلکاروں کی پٹائی کی۔ آر پی ایف کے ایک سینئر اہلکار نے نیوز ایجنسی کو بتایا ، ‘مظاہرین نے اچانک ریلوے اسٹیشن کے احاطے میں داخل ہوئے اور پلیٹ فارم ، دو تین عمارتوں اور ریلوے دفاتر میں آگ لگا دی۔ جب آر پی ایف اہلکاروں نے اسے روکنے کی کوشش کی تو انہیں بے دردی سے مارا پیٹا گیا۔

بنگلہ دیش کی سرحد سے لوگ مرشد آباد ضلع میں اس وجہ سے ٹرین خدمات متاثر ہوئی۔ نیوز ایجنسی نے بتایا کہ مظاہرین نے ہاوڑہ ضلع کے الوبیریا ریلوے اسٹیشن پر بھی پٹریوں کو بھی نقصان پہنچایا اور کچھ ٹرینوں میں توڑ پھوڑ کی اور ڈرائیور کو بھی پیٹا۔

بتادیں کہ شہریت قانون کے لاگو ہونے کے بعد پاکستان، افغانستان، بنگلہ دیش اور آس پاس کے ملکوں میں مذہبی ظلم و ستم کی وجہ وہاں سے بھاگ کر آئے ہندو، عیسائی، سیکھ ، پارسی ، جین اور بدھ مذہب کے لوگوں کو ہندوتان کی شہریت دی جائے گی۔ اس بل میں مسلم مذہب کے لوگوں کو شامل نہیں کیا گیا ہے۔ اسے لیکر حزب اختلاف جماعتوں  نے حکومت پر امتیازی سلوک ہونے اور مساوا کے آئنی حق کی خلاف ورزی کا الزام لگایا ہے۔

Tags:

You Might also Like