Type to search

قومی

اداکارہ ارمیلا ماتونڈکر نے تھاما شیوسینا کا ہاتھ

ارمیلا ماتونڈکر شیوسینا

ممبئی،1ڈسمبر(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) بالی ووڈ اداکارہ اور کانگریس کی سابقہ ​​رہنما ارمیلا ماتونڈکر نے منگل (یکم ڈسمبر 2020) کو باضابطہ طور پر شیوسینا پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی۔ ارمیلا ماتونڈکر نے پچھلے سال لوک سبھا انتخابات میں ہار ملنے کے بعد کانگریس کو چھوڑ دیا تھا۔ اب وہ شیوسینا کے ساتھ اپنی سیاست کی دوسری انگیز شروع کررہی ہے۔

منگل کے روز اداکارہ ارمیلا نے مہاراشٹرا کے وزیراعلی ادھو ٹھاکر کے رہائش گاہ پر انکی اور دوسرے پارٹی رہنماؤں کی موجودگی میں شیوسینا کی رکنیت لی۔ ممکن ہے کہ وہ گورنر کے کوٹہ کی طرف سے قانون ساز کونسل میں شامل ہوسکتی ہے۔

ممبئی میں4فروری 1971 میں پیدا ہوئی ارمیلا نے اپنے اداکاری کی شروعات چائلڈ ایکٹر کے طور پر کی تھی۔ انہوں نے مراٹھی فلم جھکولا 1980 سے ڈیبیو کیا ۔ کلیوگ 1981 انکی پہلی ہندی فلم تھی۔ ارمیلا نے 3 مارچ 2016 کو کشمیر کے بزنسمین اور ماڈل محسن اختر سے شادی کی۔

ہندی سینما انڈسٹری میں ارمیلا کے فلم معصوم سے پہچان ملی۔ لیکن ارمیلا کو اصلی پہچان سال 1995 میں ریلیز ہوئ رام گوپال ورما کی فلم رنگیلا سے ملی۔ فلم میں ارمیلا کے ساتھ عامر خان اور جیکی شراف اہم رول میں تھے۔

ارمیلا ماتونڈکر نے 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں سیاسی سفر کی شروعات کی تھی۔ انہوں نے عام انتخابات میں کانگریس پارٹی کا دامن تھاما، وہ ممبئی نارتھ سیٹ سے انتخابی میدان میں اتری تھی۔

انکا مقابلہ بی جے پی کے ایم پی گوپال شیٹی سے تھا۔ اس انتخابات میں ارمیلا کو شکست ملی تھی۔انتخاب ہارنے کے کچھ وقت بعد اداکارہ نے کانگریس پارٹی سے استعفی دے دیا۔

تصویر بشکریہ : اے این آئی۔

Tags:

You Might also Like