Type to search

ٹی وی اور فلم

ارشد وارثی : اپنی اداکاری سے لوگوں کے دلوں میں جگہ بنائی

arshad-warsi struggle life

فلمی ڈسک،19اپریل (اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) بالی ووڈ اداکار ارشاد وارثی کا آج یوم پیدائش ہے اور وہ 51 سال کے ہوگئے ہیں۔ ارشد وارثی کی پیدائش 19 اپریل 1961 کو ممبئی کے ایک مسلمان گھرانے میں پیدا ہوئی۔ انہوں نے اپنے کیریئر میں بہت ساری عمدہ فلمیں کیں۔ ارشد بڑے پردے پر ناظرین کو ہنسانے والے ارشد کی زندگی میں کئی اتار چڑھاؤ سے بھری رہی ہے ۔

ارشد وارثی نے اسکول کی تعلیم بورڈنگ اسکول میں کی تھی۔ انکی عمر صرف 8 سال تھی جب انکے بورڈنگ اسکول میں بھیجا گیا۔ گھر کے حالات کو دیکھتے ہوئے انہیں اپنی تعلیم دسویں کلاس تک ہی محدود کرنا پڑی۔ ایک انٹرویو میں ارشد نے بتایا تھا کہ وہ سال میں صرف دو بار اپنے گھر جاتے تھے۔ کئی بار انکے والدین انکی (ارشد کو) چھوٹیوں کے بارے میں بھول جاتے تھے تو جہاں باقی سب بچے اپنے گھر جاتے تھے ارشد بورڈنگ اسکول میں اکیلے رہتے تھے۔ ارشد نے بتایا کہ کبھی کبھی تو ہو خود خط لکھتے تھے اور اپنے دوستوں سے ان خطوط کو انہیں (ارشد کو) پوسٹ کرنے کے لیے کہتے تھے۔

 

ارشد اچھے خاندان سے تھے لیکن ان کی زندگی اس وقت بدل گئی جب بون کینسر کی وجہ سے انکی والد کا انتقال ہوگیا ۔ان کے والد کا نام احمد علی خان تھا۔ اسکے بعد دو سال کے اندر انکی ماں کا بھی انتقال ہوگیا اسکے بعد پیسوں کی کمی کی وجہ سے انہیں اسکول سے بھی نکال دیا گیا۔ ارشد کے خاندان کے دو گھر تھے لیکن والدین کے انتقال کے بعد وہ دونوں انکے کرایہ داروں نے ہڑپ لیا۔ جسکی وجہ سے ارشد اور انکے بھائی کو ایک چھوٹے سے گھر میں رہنا پڑا۔

گھر چلانے کے لیے پیسوں کی کمی پوری کرنے کے لیے 17 سال کی عمر میں ارشد کو گھر گھر جاکر کاسمیٹکس آئٹم فروخت کرنا پڑا۔ اسکے بعد انہوں نے فوٹو لیب میں بھی کام کیا۔ ارشد کو ڈانس میں دلچسپی تھی تو انہوں نے اکبر سمیع کے ڈانس گروپ جوائن کرلیا سال 1987 میں ٹھکانہ اور کاش فلموں میں انہوں نے کوریوگرافی کی۔ اور 1991 میں انڈین ڈانس مقابلہ کا خطاب بھی جیتا ۔

اس کے بعد انہوں نے بالی ووڈ کا رخ کیا۔ ارشد بچپن سے ہی فلموں میں کام کرنا چاہتے تھے۔ انہیں کم عمری میں ہی اپنی جدوجہد بھری زندگی کا آغاز کرنا پڑا۔

ابتدائی دور میں ارشد نے مہیش بھٹ کے اسسٹنٹ کے طور پر کام کیا۔ سال 1993 میں آئی فلم ’روپ کی رانی چوروں کا راجہ‘ میں ارشد وارثی نے بطور رقص ڈائریکٹر کے طور پر کام کیا۔ ارشد کو ہندی سنیما میں اداکاری کرنے کا پہلا موقع امیتابھ بچن کی کمپنی کی فلم تیرے میرے سپنے سے ملا ۔

یہ فلم ہٹ ثابت ہوئی۔ اس فلم کے بعد انہوں نے ’بیتابی، ہیرو ہندستانی، ہوگی پیار کی جیت، جانی دشمن جیسی چند فلموںمیں کام کیا لیکن وہ بالی ووڈ میں اپنی شناخت بنانے میں کامیاب نہیں ہوسکے۔ سال 2003 میں ارشد ہدایت کار ودھو ونود چوپڑا کی فلم منا بھائی ایم بی بی ایس سے بالی ووڈ میں اپنی شناخت بنانے میں کامیاب ہوسکے۔

اس فلم میں انہوں نے سرکٹ کا کردار ادا کیا تھا ۔ وہ سنجے دت کے داہنے ہاتھ کے طورپر نظر آئے جسے آج تک بالی ووڈ کے شائقین یاد رکھتے ہیں۔ اس کے بعد وہ پھر راجو ہیرانی کی اس فلم کے سیکوئل لگے رہو منا بھائی میں نظرآئے۔ دونوں ہی فلموں کے لئے انہیں کئی انعامات سے نوازا کیا گیا۔

سال 1996 میں انھیں فلم تیرے سپنے مل گئے جو امیتابھ بچن کے پروڈکشن ہاؤس کے تحت بنی تھی۔ اس کے بعد انہوں نے متعدد فلموں میں اداکاری کی اور اپنی ایک الگ پہچان بنائی۔ ان سب کے درمیان ، ارشد اور انکی اہلیہ ماریہ نے ایک دوسرے کو چاہنے لگے اور سال 1999 میں دونوں نے شادی کی۔ 10 اگسٹ 2004 کو دونوں پہلی بار والدین بنے۔ اس دن دونوں کےبیٹے کا جنم ہوا اسکے بعد 2مئی 2007 کو دونوں کے گھر ایک بیٹی کا جنم ہوا۔

 

Tags:

You Might also Like