Type to search

صحت

کیوی : ان پریشانیوں سے دور رہنے کے لئے روزآنہ کھائیں ایک کیوی

کیوی

ہیلتھ ڈسک، (اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ہر موسم میں ملنے والا پھل کیوی کا نہ صرف مزہ ہی الگ نہیں ہے بلکہ صحت کے لیے بھی یہ بہت فائدے مند ہے۔ کیوی پھل کا مزہ میٹھا اور کھٹا ہوتا ہے۔ اس پھل دیکھنے میں بھی پھلوں سے بہت الگ ہوتا ہے۔ باہر سےیہ بھورے رنگ کا جبکہ اندر سےیہ پھل متوجہ نہیں کرتا ہے لیکن صحت کے لیے بہ فائدے مند ہوتات ہے۔ کیوی پھل کو نیوزی لینڈ میں کیوی فروٹ کہا جاتا ہے۔ اسکی زیادہ تر کاشت اٹلی، نیوزی لینڈ، چلی، یونان اور فرانس میں کی جاتی ہے۔ تو آئیے بتاتے ہیں کیوی پھل کے کئی سارے فائدے۔

کیوی میں بھر پور مقدار میں فائبر ہوتا ہے جو دل کو صحت مند رکھ کر سنگین بیماریوں سے دور رکھتا ہے۔ اسکے استعمال سے لیور، اسٹروک، کارڈیک آریسٹ، ہارٹ اٹیک، دیگر کئی سنگین بیماریوں کا خطرہ ٹلا رہتا ہے۔

اس پھل میں موجود عناصر بلڈ کلوتٹنگ یعنی نس میں خون جمنے سے روکتا ہے، جس سے کئی پرابلم کم ہوتے ہیں اور کینسر جیسی سنگین بیماری سے بھی بچا جاسکتا ہے۔

اس پھل میں پائے جانے والے اینٹی آکسیڈنٹس جلد کو صاف اور خوبصورت بناتے ہیں۔ دھوپ کے اثر سے بھی یہ جلد کو بچائے رکھتا ہے ۔ یہ آپ کی جلد کو جواں اور جھرریوں سے پاک رکھتا ہے۔ اسکے علاوہ اسکا جلد کے ٹکسچر اور آپ کے پورے صحت پر بھی اچھا اثر ڈالتا ہے۔

کیوی میں پوٹاشیم کی زیادہ مقدار ہوتی ہے ، جس سے بلڈ پریشر بھی کنٹرول  میں رہتاہے۔

کیوی کے استعمال سے جسم میں سوڈیم کا لیول کم ہوتا ہے اور کارڈیووسکولر رگوں سے بچاؤ ہوتا ہے۔

اسکے علاوہ کیوی میں انٹی۔انفلیمٹری کی خصوصیت ہوتے ہیں۔

جس سے سوجن کا مسئلہ دور رہتا ہے۔

اگر آپ کو ہر دن نیند نہیں آتی ہے تو کیوی کا استعمال کریں۔

اس سے ذہن پرسکون رہے گا اور نیند بھی اچھی آئے گی۔

کیوی کھانے سے نیند کی کوالٹی 5 سے 13 فیصدی تک بہتر ہوجاتی ہے۔

آنکھوں کے لیے ہے فائدے مند

کیوی میں لیوٹن پایا جاتا ہے۔ جو ہماری جلد اور ٹیوشوز کو صحت مند رکھتا ہے۔

کیوی کے استعمال سے آنکھوں کی کئی بیماریاں دور رہتی ہے۔

آنکھوں کے ذیادہ تر مسائل ایسے ہوتے ہیں جو انہی لیوٹن کے ختم ہوجانے کی وجہ سے پیدا ہوتی ہے۔

اسکے علاوہ کیوی میں بھر پور وٹامن اے پایا جاتا ہے جو آنکھوں کی روشنی اچھی رکھتا ہے۔

جو لوگ اپنے بڑھتے وزن سے پریشان ہے، انہیں بھی اس پھل کا استعمال کرنا چاہیئے۔

اس میں کیلوری کافی کم مقدار میں ہوتی ہے۔ اس میں فائبر بھی بھرپور ہوتا ہے۔

اس پھل کا سب سے بڑا فائدہ یہ ہوتا ہے کہ استھما سے لڑنے میں کافی بہت موثر ہے۔

ایسا اس لیے کیونکہ اس میں وٹامن سی بھرپور مقدار میں ہوتا ہے۔

تحقیق میں کہا گیا ہے کہ جو بچے ہفتے میں ایک یا دو بار اس پھل کو کھاتے ہیں انہیں بریتھ (سانس) کی بیماریوں سے بچاؤ کرنے میں مدد ملتی ہے۔

Tags:

You Might also Like