Type to search

قومی

سی اے اے ۔ این آر سی پر اویسی نے کہا ۔ کاغذ نہیں دیکھائیں گے، سینا دیکھا کر کھائیں کہیں گے ۔ مارو گولی

حیدرآباد،10فروری(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) شہریت ترمیمی ایکٹ اور این آر سی کے خلاف ملک کے حصوں میں چل رہے مخالف مظاہرے کے درمیان آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر اور حیدرآباد سے ایم پی اسد الدین اویسی نے کہا کہ ہم کاغذ نہیں دیکھائیں گے۔ اگر کاغذ دیکھانے کے لیے کہا جائے گا تو سینا دکھائیں گے کہ مارئیے گولی۔ نیوز ایجنسی اے این آئی کے مطابق اویسی نے کہا، جو مودی۔ شاہ کے خلاف آواز اٹھائے گا وہ صحیح معنی میں مرد۔ مجاہد کہلائے گا۔ میں وطن میں رہونگا ، کاغذ نہیں دیکھاؤنگا۔ کاغذ اگر دیکھانے کی بات ہوگی تو سینا دیکھائیں گے کہ مار گولی۔ مار دل پے گولی مار کیونکہ دل میں ہندوستان کی محبت ہے۔

A Owaisi: Jo Modi-Shah ke khilaaf awaaz uthayega woh sahi maayne mein mard-e-mujahid keh layega…Main watan mein rahunga,kaagaz nahi dikhaunga. Kagaz agar dikhane ki baat hogi toh seena dikhayenge ki maar goli. Maar dil pe goli maar kyunki dil mein Bharat ki mohabbat hai.#CAApic.twitter.com/5VOPBgK8Ze

— ANI (@ANI)

February 10, 2020

اویسی اس سے پہلے بھی سی اے اے اور این آر سی کو لیکر مودی کی قیادت والی حکومت پر تنقید کی ہے۔ حال ہی میں اویسی نے شہریت قانون کو  امتیاز والا بتایا تھا۔ ساتھ ہی انہوں نے  کہا تھا کہ اس قانون سے مسلمانوں کو پریشان کیا جائے گا۔ ایم آئی ایم رہنما نے اپنے ٹیوٹ میں لکھا تھا، وزیراعظم دفتر کا کہنا ہے کہ سی اے اے کسی بھی ہندوستانی کی شہریت لینے کا قانون نہیں ہے۔ لیکن جیسا میں کہتا ہوں اسکا استعمال غیر مسلموں کو حراست سے نکالنے کے لیے کیا جائے گا انکے معاملے ختم کردیئے جائیں گے۔ وہیں مسلم حراست میں رہیں گے۔

اس سے پہلے انہوں نے شاہین باغ میں ہو رہے مظاہرے کو ختم کرانے کے لیے حکومت کی طرف سے طاقت کے استعمال کا امکان ظاہر کیا تھا۔ شاہین باغ میں شہریت قانون کے خلاف پچھلے دو مہینوں سے مظاہرہ ہورہا ہے۔ نیوز ایجنسی اے این آئی نے اویسی سے پوچھا کہ کیا ایسے سگنل ہیں کہ 8 فروری کے بعد سرکار شاہین باغ سے مظاہرین کو ہٹا دے گی۔ اسکے جواب میں اویسی نے کہا، ہوسکتا ہے وہ انہیں گولی مار دیں، وہ شاہین باغ کو جلیان والا باغ بھی بنا سکتے ہیں۔ ایسا ہوسکتا ہے ۔ بی جے پی وزیروں نے گولی مارنے والے بیان دیئےہیں۔ سرکار کو جواب دینا ہوگا کہ کون بنیاد پرست ہے۔

Tags:

You Might also Like