Type to search

بین الاقوامی جرائم و حادثات

ماں بنی حیوان، اپنےہی تینوں بچوں کو تڑپا تڑپا کے مار ڈالا

ایریزونا ،23جنوری(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ڈرگس کا نشہ انسان کو حیوان بنا دیتا ہے اور امریکہ کے فینکس میں ایسی ہی ایک حیوانیت دیکھنے کو ملی ہے۔ جہاں ایک ماں نے اپنے تین بچوں کو تڑپا ۔ تڑپا کے مار ڈالا۔ بچے ہاتھ ۔ پاؤں پٹکتے رہے لیکن اسے رحم نہیں آیا۔ اور تب تک انکا دم گھوٹتی رہی جب تک انکی سانس نہیں تھم گئی۔ بعد میں ان بچوں کو صوفے پر لیٹا کر گھر والوں کو بتایا کہ وہ سوئے ہوئے ہیں۔ پولیس نے اس خاتون کو گرفتار کرلیا ہے۔

یہ واقعہ امریکہ کے ایریزونا ریاست کا ہے جہاں ہنری (22) نے اپنا جرم قبول کرلیا۔ ہنری نے پولیس کے سامنے جس طرح پورا واقع شیئر کیا ، اسے سن کر ۔ پڑھ کر انسان کی روح کانپ سکتی ہے۔اسکے خلاف قل کا کیس درج کیا گیا ہے۔ پولیس کے مطابق بچوں کو قتل کے پچھے کی وجہ کا مقصد نہیں چل پایا ہے۔ لیکن خاتون کے گھر میں موجود ایک رشتہ دار کا کہنا ہے کہ وہ ڈرگس کی عادی تھی اور کچھ دنوں سے عجیب غریب حرکت کررہی تھی۔

ہنری نے سب سے پہلے بتایا کہ وہ تب تک بچوں کے ناک اور منہ کو اپنے ہاتھ سے دباتی رہی جب تک کہ  تین سال کا بیٹا دیکھ رہا تھا اور بہن کو بچانے کے لیے ماں کو بار۔بار مکا مار رہا تھا۔ خاتون نے اسکے بعد اپنے تین سال کے بیٹے کو بیڈ پر لیٹا کر اسکی جان لے لی۔ وہ اپنی جان بچانے ماں کے ہاتھ کھروچتا رہا، چیمٹیاں لیتا رہا، لیکن وہ اسکی جان لینے پر آمدہ تھی اور جان لیکر ہی مانی، اس دوران وہ اسے لوری سناتی رہی۔

دونوں کی جان لینے کے بعد باری تھی سب سے چھوٹی بچی کی جو صرف 7 مہینے کی تھی۔ ہنری نے پہلے اسے بوتل سے دودھ پلایا اور پھر لوری سناتے سناتے اسکا دم گھونٹ دیا، اپنے بیان میں ہنری نے بتایا کہ اسکے بعد سبھی کے لاشوں کو اس نے لیونگ روم کے صوفے پر لیٹا دیا۔ انہوں نے گھر میں موجود دو دیگر لوگوں کو بتایا کہ بچے سو رہے ہیں۔ بچوں میں کوئی حرک نہ دیکھ کر گھر کے ایک رکن نے ایمرجنسی نمبر پر فون کیا۔ پولیس گھر پہنچی اور بچوں کو مردہ قرار دے دیا۔