Type to search

قومی

شاد نگر واقع: پارلیمنٹ  کے باہر خاموش احتجاج کررہی لڑکی کو پولیس نے حراست میں لیا

نئی دہلی،30نومبر(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ہفتہ کی صبح دہلی میں پارلیمنٹ کے پاس 22 سال کی لڑکی ایک پلے کارڈ ہاتھ میں لے کر بیٹھ گئی- یہ لڑکی حیدرآباد میں خاتون وٹرنری ڈاکٹر عصمت ریزی اور قتل کے واقع سے پریشان تھی-

پارلیمنٹ کے باہر بیٹھنے سے پہلے انو دوبے نام کی اس لڑکی نے ایک ویڈیو بھی بنایا- ویڈیو میں لڑکی نے کہا کہ وہ اب اور نہیں ڈرنا چاہتی اور کسی دوسری لڑکی کے سپورٹ میں آج پارلیمنٹ کے باہر بیٹھ رہی ہے-

لڑکی نے پلے کارڈ پر لکھا تھا کہ خواتین محفوظ کیوں نہیں ہے- میڈیا چینلوں سے بات کرتے وقت لڑکی رو رہی تھی اور بار-بار یہی پوچھ رہی تھی کہ اتنے سالوں میں کیا بدل گیا- ماں باپ جلدی گھر آنے کا مشورہ دیتے ہیں اور پولیس صرف اثر و رسوخ والوں کے لیے ہے- لڑکیاں کب تک ڈرتی رہیں گی- آج میں ڈرنا نہیں چاہتی- جو حیدرآباد میں لڑکی کے ساتھ ہوا، وہی کل میرے ساتھ ہوگا، میں جلونگی لیکن لڑوں گی- کچھ دیر بعد دہلی پولیس لڑکی کو وہاں سے اٹھا کر پارلیمنٹ اسٹریٹ پولیس اسٹیشن لے گئی-