Type to search

فیشن

لڑکی نے آنکھوں میں بنوایا نیلے رنگ کا ٹیٹو، تین ہفتوں کے لیے ہوگئی تھی نابینا

فیشن ڈسک،6نومبر(اردو پوسٹ انڈیا ڈاٹ کام) ہر انسان کو کسی نہ کسی بات کا فتور سوار ہوتا ہے۔ کچھ لوگ زندگی کے اپنے مقصد کو ہی فتور بنالیتے ہیں۔ کچھ لوگوں کے سر پر اپنے پیار کے لیے فتور سوار رہتا ہے۔ لیکن کچھ لوگ ایسے بھی ہیں جنکے لیے انکا فتور انکی خود کی جان کا دشمن بن جاتا ہے۔ آج کی خبر بھی کچھ اسی طرح کی ہے۔ جہاں ایک لڑکی کے لیے ٹیٹو بنوانے کا جنون ہی اسکے لیے خطرہ بن گیا۔
آسٹریلیا کے ساؤتھ ویلز کے سینڑل کوسٹ سے تعلق رکھنے والی 24 سالہ لڑکی امبر لیوک پر ٹیٹو بنوانے کا ایسا فطور سوار ہے کہ انہوں نے اپنے جسم کو ٹیٹو سے ہی ڈھک لیا ہے۔امبر کو اب تک اپنے جسم پر 200 سے بھی زیادہ ٹیٹو بنوا چکی ہے۔ امبر کو ٹیٹو میکنگ کی دنیا میں ڈریگن گرل کے نام سے جانا جاتا ہے۔ لیکن ٹیٹو بنوانے کایہ جنون امبر کے لیے ایک بڑا خطرہ بن گیا ہے۔
دراصل کچھ وقت پہلے امبر نے اپنی آنکھوں میں ٹیٹو بنوا کر آنکھوں کا رنگ نیلا کروانے کا فیصلہ کیا تھا۔ اسکے بعد ایمبر نے آنکھوں میں ٹیٹو بنواکر انکا رنگ نیلا کروالیا تھا۔ لیکن اسکی وجہ سے وہ اندھی ہوگئی تھی۔
امبر اب تک ٹیٹو بنوانے پر 26 ہزار ڈالر یعنی 18.37 لاکھ سے زیادہ روپے خرچ کرچکی ہے۔ امبر خود کو نیلے آنکھوں والی سفید ڈریگن کہلانا پسند کرتی ہے۔ انہوں نے حال ہی میں آنکھوں میں ٹیٹو بنوانے کا پنا تجربہ شیئر کیا۔ اسکے بارے میں انہوں نے بتایا کہ آنکھوں میں ٹیٹو بنوانا انکے لیے سب سے خطرناک تجربہ تھا۔ اس کام میں 40 منٹ لگے تھے اور اسکے بعد وہ تین ہفتوں کے لیے اندھی ہوگئی تھی۔
امبر آگے کہتی ہیں، میں اس تجربے کو الفاظ میں بیان نہیں کرسکتی ۔ جب میری آنکھوں میں ٹیٹو کا انک ڈالا جارہا تھا، تب مجھے ایسا لگ رہا تھا جیسے کسی نے شیشے کو 10 نوکیلے ٹکڑوں میں میری آنکھوں میں ڈال دیئے ہیں۔ آنکھوں میں سیاہی ڈالنے کا یہ عمل سال میں چار بار ہوتا تھا۔ یہ عمل خطرناک ہوتا ہے۔ کیونکہ اگر اس عمل میں تھوڑی بھی گڑبڑی ہوتی تو ایمبر ہمیشہ کے لیے اپنی آنکھوں کی روشنی کھو دیتی۔
امبر کا کہنا ہے کہ وہ مارچ 2020 تک اپنے پورے جسم کو ٹیٹو سے ڈھکنا چاہتی ہے۔ ایمبر نے سرجری کے ذریعہ اپنے بریسٹ، ہونٹوں اور بھنوں، میں ٹرانسفرمیشن بھی کروایے ہیں، لیکن ایمبر نے بتایا کہ آنکھوں میں ٹیٹو بنوانے کے بعد جب انہوں نے پہلی بار ایمبر کو دیکھا تو وہ رو پڑے تھے۔
ٹیٹو کو لیکر امبر کی دیوانگی 16 سال کی عمر میں پروان چڑھی تھی۔ ایمبر کا ماننا ہے کہ ٹیٹو انکی منفی توانائی کا توڑ ہے۔ وہ کہتی ہے کہ انہیں اس بات کی کوئی فکر نہیں ہے کہ وہ بوڑھی ہونے کے بعد کیسے دیکھیں گی۔ ایمبر کے مطابق، 70 سال کی عمر میں کوئی بھی انسان خوبصورت نہیں دیکھتا۔ ایمبر کے لیے انکے ٹیٹو ہی ایک ایسی چیز ہے جسے لیکر وہ آخر میں دفن ہونا چاہتی ہے۔

Tags: